ہماری حکومت قومی خزانے میں خورد برد کو حرام سمجھتی ہے ، نواز شریف

ہماری حکومت قومی خزانے میں خورد برد کو حرام سمجھتی ہے ، نواز شریف

                جھنگ(اے پی پی) وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ سیلاب سے متاثرہ90فیصد خاندانوں کو امداد کی پہلی قسط مل گئی،دوسری قسط کا اجراء20اکتوبر سے ہو گا،متاثرین کو گھروں میں آباد کرنے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے،پاکستان کے وسائل غریب عوام کی فلاح پر خرچ ہونگے،ہماری حکومت قومی خزانے میں خورد برد کو حرام سمجھتی ہے،کرپشن سے دور رکھنے پر اللہ کے شکرگزار ہیں،متاثرین کی امداد میں پاک فوج اور سول انتظامیہ نے جانفشانی سے کام کیا سب کو مبارکباد دیتا ہوں۔ جھنگ کے علاقے جنڈیانہ میں متاثرین سیلاب سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہاکہ سیلاب سے بہت تباہی ہوئی ہے،لوگوںکے گھروں،فصلوں اور مال مویشیوں کو نقصان پہنچا، روزمرہ کی زندگی متاثر ہوئی اس کے باوجود متاثرین نے ہمت اور بہادری سے صورتحال کامقابلہ کیا۔میں متاثرین کے حوصلے کی داد دیتا اور ان کے صبرواستقلال کو سلام پیش کرتا ہوں۔انہوںنے کہاکہ ہمیں متاثرین کی مشکلات کا احساس ہے ان کی مکمل بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیںگے، سیلاب زدگان کی مدد کسی پر احسان نہیں یہ ہمارا فرض ہے۔انہوںنے کہاکہ وفاقی اور صوبائی حکومت نے متاثرین کی ہرممکن مدد کی اور ہم اللہ اور قوم کے سامنے سرخرو ہوئے ہیں۔انہوںنے کہاکہ جب تک متاثرین اپنے پاﺅں پرکھڑے نہیں ہوجاتے ہم بھی پیچھے نہیں ہٹیںگے،تمام وسائل بروئے کار لائے جائیںگے۔انہوںنے کہاکہ حکومت نے امدادی کاموں کے لئے تمام وسائل فراہم کئے ،متاثرین کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے کے لئے ہیلی کاپٹر فراہم کئے اور ہر علاقے میں امداد پہنچانے کی کوشش کی،نقصانات کا تخمینہ لگانے کے لئے فوری طورپر کام شروع کیاگیا،معاوضہ دینے کا کام ابھی جاری ہے۔25 ہزار کی پہلی قسط تقسیم کی جارہی ہے، 20 اکتوبر سے دوسری قسط کا اجراءبھی ہوجائے گا۔انہوںنے کہاکہ وزیراعلی شہبازشریف کی ہدایت پر صوبائی وزیر ندیم کامران اور غلام بی بی بھروانہ امدادی کاموں کی ذاتی طورپر نگرانی کررہے ہیں۔تمام ایم این ایز اور ایم پی ایز بھی کار خیر میں برابر کے شریک ہیں۔انہوںنے کہاکہ ہم متاثرین کو دوبارہ گھر بنا کردینگے،ان کے مالی نقصانات کا ازالہ کیاجائے گا،دریا کے کٹاﺅ کو روکیںگے۔وزیراعظم نے تھیوا کے ہائی سکول کو کالج کادرجہ دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ حکومت اپنے فرض سے غافل نہیں ہے،چیف سیکرٹری پنجاب،کمشنر اور ڈی سی اوز نے متاثرین سیلاب کی بہترین انداز میں مدد کی ہے جس پروہ سب مبارکباد کے مستحق ہیں،منتخب عوامی نمائندوں کے ساتھ انتظامیہ نے بڑا کام کیا اور لوگوں کے دکھ درد کو بانٹا ہے۔ نواز شریف نے کہاکہ امدادی سرگرمیوںمیں پاک فوج کے جوانوں نے بھی جان فشانی سے کام کیا ہے جس پر وہ بھی مبارکباد کے مستحق ہیں،ریسکیو 1122 کا شکرگزار ہوں۔ انہوںنے کہاکہ سیلاب سے متاثرہ نوے فیصد لوگوں کوپہلی قسط مل چکی ہے،اتنی تیزی سے آج تک رقم متاثرین کو نہیں ملی۔انہوںنے کہاکہ پاکستان کے وسائل غریب عوام اور متاثرین کے لئے ہیں،عوام نے اس ملک کو اپنے خون پسینے سے بنایا ہے ،قومی خزانہ ان کی فلاح پر خرچ ہوگا،ہماری حکومت ایک پیسہ بھی اپنی ذات پر خرچ کرنے اور خورد برد کو حرام سمجھتی ہے۔اللہ کاشکر ہے جس نے ہمیں کرپشن سے بچایا ہے،ہم پاکستان کے شہروں کے ساتھ ساتھ دیہی علاقوں کی ترقی بھی یقینی بنائیںگے۔ اس موقع پر وزیراعظم کو امدادی سرگرمیوں اور نقصان کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔نواز شریف نے متاثرین میں 25,25ہزار کے امدادی چیک بھی تقسیم کئے۔

 نواز شریف

مزید : صفحہ اول