صوابی، چھوٹا لاہور میں عالمی یوم اساتذہ کی پروقار تقریب سعید

صوابی، چھوٹا لاہور میں عالمی یوم اساتذہ کی پروقار تقریب سعید

خوش قسمت ہوتے ہیں وہ لوگ جن کی زندگی میں اچھے استادمیسر آجاتے ہیں ایک معمولی سے نوخیز بچے سے لے کر ایک کامیاب فرد تک سارا سفر اساتذہ کا مرہون منت ہے۔ وہ ایک طالب علم میں جس طرح کا رنگ بھرنا چاہیں بھرسکتے ہیں۔استاد قوموں کی تعمیر میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔اساتذہ اپنے آج کو قربان کرکے بچوں کے کل کی بہتری کے لیے کوشاں رہتے ہیں۔ دیگر معاشروں اور مذاہب کے مقابلے میں اگر اسلام میں استاد کے مقام کے بارے میں ذکر کیا جائے تو اسلام اساتذہ کی تکریم کا اس قدر قائل ہے کہ وہ انہیں روحانی باپ کا درجہ دیتا ہے ۔ کسی بھی انسان کے اصلی والدین اس کو آسمان سے زمین پر لے کر آتے ہیں لیکن استاد اس کی روحانی اور اخلاقی تربیت کے نتیجے میں اسے زمین کی پستیوں سے اٹھا کر آسمان کی بلندیوں تک پہنچا دیتا ہے۔ طالب علم کو آسمانوں کی بلندیوں تک پہنچانے میں اساتذہ بہت نمایاں کردار ادا کرتے ہیں۔ اسی لیے اللہ کے نبی ﷺ نے بے شمار جگہوں پر اساتذہ کرام کے احترام کا حکم دیا ہے۔ اسلام میں علم کے حصول کے لیے کئی مقامات پر تاکید کی گئی ہے اساتذہ علم کے حصول کا براہ راست ذریعہ ہیں۔ اس لیے ان کے احترام کا حکم بھی دیا گیا ہے ۔ اس احترام کی وجہ سے اور استادکے خدمات کے اعتراف کے طور پر ہر سال پانچ اکتوبر کو سلام ٹیچرڈے منایا جا رہا ہے پورے ملک کی طرح ضلع صوابی کے تحصیل چھوٹا لاہور میں بھی ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ضلعی افسران محکمہ تعلیم ، سماجی ورکرز طلباء اور اساتذہ کی ایک کثیر تعداد نے شرکت کی۔ پروگرام کے مہمان خصوصی صوبائی وزیر عبدالکریم خان تھے۔

پورے تحصیل لاہور میں گیارہ یونین کونسل ہیں اور بوائز پرائمری سکول کی تعداد106ایک کمیٹی کے ذریعے جس میں کونسلرز ،پی ٹی اے کے اراکین اور اے ڈی او زشامل تھے نے کارکردگی کی بنیاد پر 11اساتذہ کو بیسٹ ٹیچرز کیلئے نامزد کیا ۔ ان میں محمدایاز گورنمنٹ پرائمری سکول نمبر1 جلسی ، عمار احمد جی پی ایس وکیل آباد، لطیف اللہ خان جی پی ایس صمد ڈیپو ، انعا م اللہ جی پی ایس نمبر۱ انبار ، طاہر علی جی پی ایس تکون ڈھیری، اعجاز خان جی پی ایس پاک کیا ، ارشد علی جی پی ایس جلبی چونتری، محمد سیار جی پی ایس جہانگیرہ نمبر2، عامر انور جی پی ایس تورڈھیرنمبر2 ، حسن محمد جی پی ایس مانکی نمبر1 اور افسر علی جی پی ایس جلبی ان تمام محترم استاذکو مہمان خصوصی نے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ 2017دئیے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سب ڈویژن ایجوکیشن آفیسرتحصیل لاہور غذا باچا نے کہا کہ جو طلبہ اپنے اساتذہ کا احترام کرتے ہیں ان کی عزت اور تکریم کا خیال رکھتے ہیں اور پڑھائی مکمل ہونے کے بعد اپنے اساتذہ کی عزت اور وقار کا خیال رکھتے ہیں۔ ہمیشہ کامیابی اور کامرانی ان کے قدم چومتی ہے۔ امام ابو حنیفہؒ امام محمدؒ ، امام احمد بن حنبل ؒ اور امام شافعیؒ اسلامی تاریخ کے نمایاں اساتذہ میں شامل ہیں۔ جبکہ ان کی اپنی زندگی اساتذہ کے ساتھ خوب صورت تعلق سے عبارت تھی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت نے اساتذہ اور طلبا کی بہتر ی کیلئے ٹھوس اقدامات کیے ہیں جن کی بدولت سکولوں کی حالت دن بہ دن بہتر ہوتی جا رہی ہے اور تعلیمی معیار بھی بہتری کی طرف گامزن ہے ۔ اے ڈی او محمد عابد نے کہا کہ کوئی بھی مہذب وترقی پسند قوم ملک معاشرہ استاد کے مقام ومرتبہ اور اہمیت سے انحراف نہیں کرسکتا ۔ خصوصااسلامی معاشرہ میں تو اساتذہ کو جو ادب و احترام حاصل ہے اس کی کوئی نظیر کوئی دوسرا مہذب معاشرہ دینے سے قاصر ہے ۔ آج ہم آپ کے سامنے کھڑے ہیں تو یہ بھی اساتذہ کی مرہو ن منت ہے ہمیں ہر حال میں اساتذہ کو عزت دینا ہے صوبائی وزیر صنعت عبدالکریم خان نے ان اساتذہ کو خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے اپنی بہترین کارکردگی کی وجہ سے بیسٹ ٹیچر ایوارڈ اپنے نام کرلیا۔ اسی دن کو منانے کا مقصد اساتذہ کو اقوام عالم کے لیے خدمات کا اعتراف کرنا ہے ۔ یہ دن انتہائی خلوص، محبت اور عقیدت سے منایاجاتا ہے اور اس عزم کی تائید کی جاتی ہے کہ آنے والی نسل کی پرورش کے لیے بھی اساتذہ کے کلیدی کردار کی ضرورت ہے ۔ آج بھی کئی مغربی ممالک میں اساتذہ ٹریفک کے سنگلز کی پابندی سے مستثنی ہیں۔ آج ہم جس مقام پر ہے اس کے پیچھے اساتذہ کا ہاتھ ہے انہوں نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ وہ اساتذہ کو ان کا جائز مقام دے ان کو فکر معاش سے آزاد کریں تاکہ وہ اپنے تمام تر صلاحیتوں کو طلباء میں منتقل کرکے ملک کی تعمیر وترقی میں اپنا کردار اداکرسکیں۔

***

مزید : ایڈیشن 1


loading...