طالبان کا مسقط میں 4 فریقی مذاکرات میں شرکت سے انکار

طالبان کا مسقط میں 4 فریقی مذاکرات میں شرکت سے انکار
طالبان کا مسقط میں 4 فریقی مذاکرات میں شرکت سے انکار

  


کابل /واشنگٹن (آئی این پی ) طالبان نے مسقط میں 4فریقی مذاکرات میں شرکت سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ 4 ملکی مذاکرات سے ہمارا کوئی تعلق نہیں،نہ ہی کسی نے ہم سے رابطہ کیا، ہم افغان حکومت کے ساتھ امن مذاکرات نہ کرنے موقف پر قائم ہیں۔

علاقائی ممالک افغانستان سے جنگ ختم کرنے میں اشرف غنی حکومت کی مدد کریں:حامد کرزئی کی اپیل

امریکی میڈیا کے مطابق طالبان کے سر کردہ رہنما نے بتایا ہے کہ موجودہ افغان حکومت کے ساتھ امن مذاکرات نہ کرنے کا طالبان کا موقف جاری ہے۔ انھوں نے کہا ہے کہ اگلے ہفتے عمان میں 4 ملکی مذاکرات سے ہمارا کوئی تعلق نہیں، جس بات چیت کا مقصد مکالمے کے ذریعے لڑائی کا سیاسی حل تلاش کرنا ہے۔طالبان رہنما نے کہا کہ ہم سے کسی نے رابطہ نہیں کیا اور نہ ہی ہم اس اجلاس میں شریک ہو رہے ہیں، کابل حکومت کے ساتھ بات چیت کے بارے میں ہمار موقف تبدیل نہیں ہوا، ہمیں اس اجلاس سے کوئی لینا دینا نہیں۔ یہ ان(رکن ملکوں) کا اپنا معاملہ ہے۔

انہوں نے مزید کہاکہ جب تک امریکی اور نیٹو افواج کا افغانستان سے مکمل انخلا نہیں ہو جاتااس وقت تک دیگر مطالبات کے علاوہ باغی اس بات کا بھی مطالبہ کرتے رہے ہیں کہ قطر میں ان کے نام نہاد سیاسی دفتر کو تسلیم کیا جائے۔واضح رہے کہ طالبان سے پوچھا گیا تھا کہ آیا اسلام نواز باغی اس نام نہاد4 فریقی تعاون گروپ یا کیو سی جی میں شریک ہوں گے یا اسے تسلیم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...