عراقی فورسز کا الحویجہ میں آپریشن، 1000داعشی کارکن گرفتار

عراقی فورسز کا الحویجہ میں آپریشن، 1000داعشی کارکن گرفتار

بغداد(این این آئی)عراق کے صوبے کرکوک میں اَسایش ضلعے کی فورسز الحویجہ کو آزاد کرانے کے آپریشن کے آغاز کے بعد داعش تنظیم کے تقریبا ایک ہزار ارکان کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہو گئیں۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابقَ سایش ضلعے کے سربراہ الرائد علی نے بتایا کہ مذکورہ عناصر نقل مکانی کرنے والے افراد کے بیچ چھپ گئے تھے اور انہوں نے دہشت گرد تنظیم داعش کا حصہ ہونے یا پھر اس کے ساتھ کام کرنے کا اعتراف کر لیا ہے۔ الرائد کے مطابق گرفتار ہونے والے تمام دہشت گرد مقامی افراد ہیں جن کے اہل خانہ کو کیمپوں میں بھیج دیا گیا ۔ انہوں نے بتایا کہ الحویجہ کی واپسی کے لیے شروع ہونے والے آپریشن کے بعد سے اب تک تقریبا 7 ہزار افراد نقل مکانی کر کے ضلعے میں آئے ہیں۔ گرفتاریوں کی کئی تصاویر منظر عام پر آئی ہیں۔ پیشمرگہ فورسز کے مطابق اس مرحلہ وار کارروائی میں حراست میں لیے گئے دہشت گردوں کی تعداد 1000 ہو گئی۔عراقی فورسز نے جمعرات 5 اکتوبر کو شمالی عراق میں داعش تنظیم کے آخری گڑھ الحویجہ قصبے کو مکمل طور پر واپس لیے جانے کا اعلان کیا تھا۔ اس سے قبل بدھ کے روز عراقی فورسز نے ضلعے کے مرکزی علاقے پر براہ راست حملہ کر دیا تھا۔عراق میں داعش تنظیم کے قبضے میں اب شام کے ساتھ مغربی سرحد کی پٹّی پر پھیلی اراضی کے سوا کچھ باقی نہیں رہا۔

مزید : عالمی منظر


loading...