ڈیزیز سرویلنس اینڈ رسپانس کا مربوط سسٹم تشکیل دیں گے،عمران نذیر

ڈیزیز سرویلنس اینڈ رسپانس کا مربوط سسٹم تشکیل دیں گے،عمران نذیر

لاہور(جنرل رپورٹر)محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ پنجاب صوبے میں ڈیپارٹمنٹ فار انٹر نیشنل ڈویلپمنٹ برطانیہ کے تعاون سے ڈیزیز سرویلنس اینڈ رسپانس کا مربوط سسٹم تشکیل دے گا اور تمام متعدی امراض کی مانیٹرنگ کے ذریعے کسی ممکنہ وباء سے احسن طریقہ سے نمٹا جا سکے۔اس بات کا اعلان سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ علی جان خان کے ساتھ ڈیفد کے وفد کی ملاقات کے دوران کیا گیا ۔اجلاس میں ڈیفد کی ڈپٹی ہیڈ ڈاکٹر روتھ لاسو ، پبلک ہیلتھ انگلینڈ کی ڈاکٹر اینی ولسن ، ڈاکٹر میمونہ چیف ایگزیکٹو،پی پی ایچ اے کی ڈاکٹر شبنم سرفراز ، پراونشل ڈائریکٹر IRMNCH ڈاکٹر مختار حسین سید ، ایڈیشنل سیکرٹری ٹیکنیکل ڈاکٹر عاصم الطاف ، ایڈیشنل سیکرٹری ڈویلپمنٹ فاطمہ شاہ اور ڈپٹی سیکرٹری ڈاکٹر ید اللہ نے شرکت کی ۔سیکرٹری علی جان خان نے کہا کہ پنجاب میں بیماریوں کی سرویلنس اور رسپانس کے لئے مربوط سسٹم تشکیل دینے میں محکمہ صحت ڈیفڈ اور پبلک ہیلتھ انگلینڈ کے تعاون کا خیر مقدم کرے گا۔ انہوں نے کہا پی پی ایچ اے اور پبلک ہیلتھ انگلینڈ دونوں ایک مربوط سسٹم کے لئے کام کر رہے ہیں اور امید ہے ان کی کوششوں کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے ۔ پنجاب پبلک ہیلتھ ایجنسی کی ٹیم حال ہی میں ترکی کا دورہ کر کے آئی ہے اور صوبے میں بیماریوں کی سرویلنس ، مانیٹرنگ اور رسپانس کے لئے ترکی کے ماہرین سے بھی مدد لی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بیماریوں کی روک تھام کے لئے تمام سرکاری و نجی ہسپتالوں کے علاوہ جنرل پریکیٹشزز سے بیماریوں کا ڈیٹا جمع کرنا ضروری ہے۔ دریں اثناء سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ علی جان خان سے جی ای ہیلتھ کےئر (GE) برطانیہ کے وفدنے بھی ملاقات کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...