سیاسی عدم استحکام سے معیشت کو شدید دھچکا لگا ہے،خالد پرویز

سیاسی عدم استحکام سے معیشت کو شدید دھچکا لگا ہے،خالد پرویز

لاہور( کامرس رپورٹر) صدر آل پاکستان انجمن تاجران خالد پرویز نے کہا ہے کہ ملک میں جاری سیاسی عدم استحکام سے معیشت کو شدید دھچکا لگا ہے خصوصاً چھوٹے تاجروں کو بڑی مشکل کا سامنا ہے۔ بڑے شہروں کے بازارسنسان اور شاپنگ مالز ویران پڑے ہیں۔ سرمایہ کاری رک گئی ہے اور سرمایہ باہر انٹر نیشنل اکاوئنٹس میں منتقل ہو رہا ہے۔ وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور انکے اکنامک منیجرز 4سال سے عوام کو معیشت کا وہ رخ دکھاتے اور جھوٹے اعداد و شمار بتاتے رہے ہیں جو حقیقت سے مطابقت نہیں رکھتے تھے۔ اس وقت ہر پاکستانی ایک لاکھ روپے کا مقروض ہے اور ملکی موٹروے، ڈیمز،ایئرپورٹس اور دیگر اثاثے قرض دینے والوں کے پاس گروی پڑے ہیں مگر اتنے قرضے لینے کے با وجود عام آدمی کی حالت اور معیار زندگی بہتر نہیں ہوا۔انہوں نے کہا وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی معیشت کی بہتری کے لئے ہنگامی اقدامات کریں۔

شاہانہ حکومتی اخراجات اور پروٹو کول پر کٹ لگایا جائے۔ وزیروں کی فوج ظفر موج میں کمی کی جائے بزنس کمیونٹی کو تحفظ اور احترام اور بزنس فرینڈلی ماحول فراہم کیا جائے۔ کسی ٹیکس چور کو نہ چھوڑا جائے ٹیکس ہر اس شخص سے لیا جائے جس کے ذمے بنتا ہے۔ چھوٹے تاجروں کے لئے آسان کارو بار قرضہ سکیم شروع کی جائے اس سے جہاں چھوٹے تاجروں کے کارو بار میں استحکام آئے گا، وہاں روز گار کے مواقع بھی نکلیں گے۔ پاکستانی تاجر محب وطن ہیں۔ حکومتی سر پرستی ملی تو وہ ان بحرانوں میں بھی مواقع نکال لیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...