بورے والا‘ طلبہ تنظیموں میں تصادم‘ فائرنگ کی زد میںآکر 7 سالہ بچہ زخمی

بورے والا‘ طلبہ تنظیموں میں تصادم‘ فائرنگ کی زد میںآکر 7 سالہ بچہ زخمی

بورے والا(تحصیل رپورٹر)دو طلباء تنظیموں کے مابین رات گئے اندھا دھند فائرنگ کا تبادلہ،فائرنگ کی زد میں آکر 7سالہ معصوم(بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

راہگیر بچہ زخمی تفصیلات کے مطابق مقامی طلباء تنظیموں ایم ایس ایف اور ایم ایس ایم کے مابین تنازعہ چل رہا ہے کہ گذشتہ شب دونوں طلباء تنظیموں کے کارکنان کا سٹیڈیم کے عقب میں واقع پل نہر پر آمنا سامنا ہو گیا تو ایکدوسرے کو دیکھتے ہی پہلے ہوائی فائرنگ شروع کر دی اسکے بعد دونوں جانب فائرنگ کا تبادلہ شروع ہو گیا اس دوران مقامی آبادی کا رہائشی محمد منور نامی شخص اپنے7سالہ بیٹے شہیر کے ہمراہ شاپنگ کرکے گھر واپس آ رہا تھا کہ ایک فائر اْسکے بیٹے کے سر میں لگا جس سے وہ زخمی ہو گیا بچے کو تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورے والا منتقل کر دیا گیا واقعہ کی اطلاع ملنے کے باوجود پولیس ایک گھنٹہ تاخیر سے موقع پر پہنچی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچنے والے تھانہ ماڈل ٹاؤن اور تھانہ سٹی کے ایس ایچ اوز ملزمان کا تعاقب کرنے کی بجائے وقوعہ کی حدود کا تعین کرتے رہے اْنکی بحث و تکرار دیکھ کر زخمی بچے کا والد محمد منور محکمہ مال کے پٹواری کو موقع پر لے آیا جس نے حدود کا تعین کرکے بتایا کہ وقوعہ تھانہ ماڈل ٹاؤن کی حدود میں ہوا ہے دلچسپ امر یہ ہے کہ تھانہ ماڈل ٹاؤن کے ایس ایچ او اپنے تھانہ کی حدود سے بھی بے خبر تھے جس کے بعد پولیس نے محمد عباس چوہان نامی ایک ڈرائیور کو پکڑ کر اْسے اس وقوعہ کے مقدمہ میں مرکزی ملزم بنا کر مقدمہ درج کر لیا جبکہ دیگر 9نامزد ملزمان راؤ فرحان۔راؤ عدنان،قاسم عرف قاسمی،فواد خاں،علیم،یاور سلدیرا،ریحان،نوید جٹ،بالی جٹ،بلی خاں سمیت 15ملزمان کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج کر لیا لیکن تاحال طلباء تنظیموں کا کوئی بھی نامزد ملزمان گرفتار نہیں ہو سکا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...