افغان حکومت اور طالبان میں مذاکرات سے تصفیہ کیلئے کوشش کی جائیں : تہمینہ جنجوعہ

افغان حکومت اور طالبان میں مذاکرات سے تصفیہ کیلئے کوشش کی جائیں : تہمینہ ...

اسلام آباد (این این آئی)افغانستان سے متعلق شنگھائی تعاون تنظیم رابطہ گروپ کے نائب وزراء خارجہ کی سطح کا اجلاس بدھ کو ماسکو میں منعقد ہوا۔ سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کی جبکہ روس کے نائب وزیر خارجہ ایگور مارگیلوف نے اجلاس کی صدارت کی۔ افغانستان، چین، قزاخستان، تاجکستان، ازبکستان، ترکمانستان، بھارت کے نائب وزراء خارجہ اور ایس سی او کے نمائندوں نے اجلاس میں شرکت کی۔ سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے طالبان کے زیر کنٹرول علاقوں میں داعش، القاعدہ، ٹی ٹی پی اور جماعت الاحرار کے محفوظ ٹھکانوں سے سیکورٹی کی مخدوش صورتحال سمیت افغانستان کو درپیش چیلنجوں کو اجاگر کیا۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں منشیات کی پیداوار میں اضافہ سے ہمسایہ ممالک کو شدید تحفظات ہیں۔ انہوں نے افغانستان میں پائیدار امن کے حصول کیلئے افغان حکومت اور طالبان کے درمیان بات چیت کے ذریعے تصفیہ کیلئے سنجیدہ کوششوں پر زور دیا۔ سیکرٹری خارجہ نے افغان مہاجرین کی جلد از جلد باعزت واپسی کی اہمیت اور منشیات کی پیداوار اور سمگلنگ سے نمٹنے کی ضرورت پر بھی زور دیا جس سے افغانستان اور خطہ کا استحکام متاثر ہو رہا ہے۔ ایس سی او رابطہ گروپ کے رکن ملکوں نے افغانستان میں قیام امن کیلئے افغان حکومت اور عوام کی قیادت میں امن عمل کی مکمل حمایت، انسدا دہشت گردی کوششوں اورعلاقائی اقتصادی استحکام و ربطوں میں افغان حکومت کے ساتھ تعاون سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے اتفاق رائے سے افغانستان اور ایس سی او ممالک کے درمیان رابطوں کو مستحکم کرنے پر اتفاق کیا۔ رکن ممالک نے افغانستان سے متعلق ای سی او رابطہ گروپ کا اگلا اجلاس بیجنگ میں منعقد کرنے کا خیر مقدم کیا۔

شنگھائی تعاون تنظیم

Ba

مزید : علاقائی


loading...