بینک لیزنگ سے نئی گاڑیوں کی فروخت میں اضافہ، سیکنڈ ہینڈ کار ڈیلرزپریشان

بینک لیزنگ سے نئی گاڑیوں کی فروخت میں اضافہ، سیکنڈ ہینڈ کار ڈیلرزپریشان

لاہور(اسد اقبال)بینک لیزنگ کے باعث نئی گاڑیوں کی فروخت بڑھنے پر سیکنڈ ہینڈ گاڑیوں کی مانگ میں کمی سے کار ڈیلرز میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ، کاروبار کو بچانے کیلئے کار ڈیلرز فیڈریشن نے نیا لائحہ عمل بنانے کیلئے سرجوڑ لئے،حکومت سے بینک لیزنگ کے ذریعے نئی گاڑیوں کے اجراء پر پابند ی اور کوٹہ سسٹم بحال کرنے کا مطالبہ کردیا ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ تین ماہ کے دوران مقامی سطح پر تیار کی جانے والی گاڑیوں کی فروخت 50 ہزار سے تجاوز کرگئی ۔ رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں گاڑیوں کی فروخت گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 22 فیصد بڑھی جبکہ جولائی سے ستمبر کے دوران مقامی سطح پر بنائی گئی 50 ہزار 640 گاڑیاں فروخت ہوئیں ۔واضح رہے کہ گزشتہ سال کے انہیں تین ماہ کے دوران 41 ہزار 405 گاڑیاں فروخت ہوئی تھیں۔صرف ستمبر میں ہی مقامی گاڑیوں کی فروخت 15 ہزار 639 تک پہنچ گئی۔ تین ماہ میں 1300 سی سی کی 24 ہزار 343 ، 1000 سی سی کی 10 ہزار 970 اور 800 سی سی کی 15ہزار 327 گاڑیاں فروخت ہوئیں۔کار ڈیلر فیڈریشن کے صدر شہزادہ سلیم خان نے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت ملک میں شرح سود 42 سال کی کم ترین سطح پر ہے جس کے باعث عوام لیز پر گاڑیوں کی خریداری کر رہے ہیں جس کے باعث سیکنڈ ہینڈ گاڑیوں کی فروخت کا کاروبار گزشتہ کئی ماہ سے مندے کا شکار ہے اور گاہک نہ ہونے کے پیش نظر کار ڈیلرز اپنے اخراجات پورے کر نے سے قاصر ہو چکے ہیں ۔شہزادہ سلیم خان نے کہا کہ کار ڈیلر اس حوالے سے مثبت لائحہ عمل تر تیب دے رہے ہیں تاکہ ہزاروں کار ڈیلر ز کا معاشی قتل ہونے سے بچایا جا سکے دوسری جانب ملک میں آن لائن ٹیکسی سروس کے شروع ہونے سے کئی افراد نئی گاڑیاں اس کاروبار میں لگانے کیلئے خرید رہے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...