دفاع پاکستان کونسل کا انتخابات 2018ء میں بھرپور حصہ لینے کا فیصلہ

دفاع پاکستان کونسل کا انتخابات 2018ء میں بھرپور حصہ لینے کا فیصلہ

اسلام آباد ( آن لائن ) دفاع پاکستان کونسل نے الیکشن بل 2017سے ختم نبوت کے حلف نامے کو اقرار نانے میں تبدیل کرنے کی سازش کرنے والے عناصر کو منظر عام پر لانے اور واقعے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ،کونسل نے انتخابات 2018میں بھرپور حصہ لینے کا اصولی فیصلہ کرتے ہوئے چےئرمین دفاع پاکستان کونسل مولانا سمیع الحق کو اجلاس میں دیگر دینی و سیاسی جماعتوں کے سربراہان سے رابطہ کر کے آئندہ کا لائحہ عمل طے کرنے کا اختیار دے دیا گیا ، الیکشن بل میں ختم نبوت کے حلف نامہ میں تبدیلی میں ملوث افراد کے خلاف مقدمہ چلانے کا مطالبہ کر دیا امریکی و بھارتی دباؤ پر حافظ محمد سعید کی نظر بندی ختم کرنے اور سید صلاح الدین پر امریکی پابندیوں کو مسترد کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا ، الیکشن کمیشن کی جانب سے ملی مسلم لیگ کی رجسٹریشن کی درخواست مسترد کرنے کی شدید مذمت ، فاٹا اصلاحات کو فوی الفور نافذ کرنے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز مولانا سمیع الحق کی قیادت میں جامع مسجد قباء آئی ایٹ مرکز میں سربراہی اجلاس منعقد کیا گیا جس میں حافظ عبدالرحمن مکی ، لیاقت بلوچ ، محمد علی درانی ، حافظ عبدالغفار روپڑی ، اجمل خان وزیر، سیف اللہ خالد ، محمد یعقوب شیخ ، عبداللہ گل ،یحیٰ مجاہد ، قاری صہیب ترین، میر واعظ ترین ، سید احمد شاہ و دیگر نے شرکت کی۔اجلاس کے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ امریکہ کی پاکستان کودھمکیاں اور ڈومورکا مطالبہ قابل مذمت ہے‘پاکستان کو دی گئی دھمکیوں کا منہ توڑ جواب دیا جائے۔امریکہ کی طرف سے پاکستان میں دہشت گرد تنظیموں کی موجودگی کا پروپیگنڈا افغانستان میں اپنی شکست کو چھپانے کی ناکام کوشش ہے۔حکومت نام نہاد دہشت گردی کیخلاف جنگ کے امریکی اتحاد سے باہر نکلے اور اپنی آزاد مضبوط خارجہ پالیسی ترتیب دے۔ افغانستان میں قونصل خانوں کے نام پر بھارتی دہشت گردی کے اڈے بند کروانے کیلئے بھی دباؤ بڑھایاجائے۔دفاع پاکستان کونسل ملک کی نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں اور قانون ناموس رسالت ﷺ و ختم نبوت کے تحفظ کیلئے ملک گیر سطح پر بھرپور سیاسی کردارادا کرے گی۔اندرونی و بیرونی سازشوں، سیاسی و انتخابی اور معاشی دہشتگردی کے مقابلے کیلئے مولانا سمیع الحق کو اختیار دیا گیا کہ وہ فوری طور پر سربراہی اجلاس بلاکر فیصلہ کن اعلان کریں۔2018ء کے انتخابات میں حصہ لینے کیلئے جلد وسیع تر اتحاد قائم کیا جائے گا۔ بھارت و امریکہ سی پیک کو نقصان پہنچانے کی منصوبہ بندیاں کر رہے ہیں۔دشمن کی سازشیں ناکام بنانے کیلئے پاکستان چین، سعودی عرب اور دیگر ملکوں کے ساتھ مل کربھرپور کردارا دا کرے۔ غیر ملکی این جی اوز ناموس رسالت اور عقیدہ ختم نبوت سے متعلق قوانین ختم کروانے کیلئے کروڑوں ڈالر خرچ کر رہی ہیں‘ اسلام و ملک دشمن این جی اوز پر پابندی لگائی جائے ۔ الیکشن بل2017ء میں ختم نبوت کے حلف نامہ میں تبدیلی کے حوالہ سے اعلیٰ سطحی تحقیقات کی جائیں‘وزیر قانون زاہد حامد کو برطرف کیا جائے اور ملوث عناصر کی نشاندہی کر کے انہیں بے نقاب کرتے ہوئے شرعی قانون کے تحت سزائیں دی جائیں۔امریکی و بھارتی دباؤ پرجماعۃ الدعوۃکے سربراہ حافظ محمد سعید و دیگر رہنماؤں کی بلاجواز نظربندی فی الفور ختم کی جائے اور سپریم کمانڈر حزب المجاہدین سید صلاح الدین پر امریکی پابندیوں کو مسترد کیا جائے ۔حکومت پاکستان کشمیرمیں بھارتی فوج اور ایجنسیوں کے مظالم اوربھارتی دہشت گردی کا معاملہ بین الاقوامی سطح پر اٹھائے اور خارجہ ڈیسک کو مضبوط بنایا جائے۔ افغانستان میں بھارتی فوج اور ایجنسیوں کو اڈے فراہم کر کے ملک میں دہشت گردی اور فتنہ و فساد پھیلانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔بھارت، امریکہ اور اسرائیل کی خفیہ ایجنسیاں افغان سرزمین استعمال کرتے ہوئے پاکستان کیخلاف پراکسی وار میں مصروف ہیں۔ کلبھوشن جیسے دہشت گردوں کو فی الفور پھانسی دی جائے اور وطن عزیز پاکستان سے بیرونی ایجنسیوں کی مداخلت ختم کی جائے۔پاک چائنہ اقتصادی راہداری کا منصوبہ خطے میں ترقی کا ذریعہ بنے گا، اس پر امریکی و بھارتی اعتراضات کو مسترد کرتے ہیں۔ دفاع پاکستان کونسل مطالبہ کرتی ہے کہ فاٹا اصلاحات کو فی الفور نافذ کیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...