مچھلیوں کے افزائش نسل کیلئے لاکھوں روپے خرچ کررہے ہیں ،حمایت اللہ مایار

مچھلیوں کے افزائش نسل کیلئے لاکھوں روپے خرچ کررہے ہیں ،حمایت اللہ مایار

پشاور( سٹاف رپورٹر)ضلع ناظم مردان حما یت اللہ مایار نے کہا ہے کہ ضلعی حکومت مردان کے ضلعی بجٹ میں مچھلیوں کی صنعت کو فروغ دینے کیلئے 78لاکھ روپے خر چ کررہی ہے۔ تاکہ مچھلیوں کی افزائش نسل میں اضافہ ہوسکیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے موضع مایار گودرمیں 50ہزار مچھلیاں چھوڑنے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشری ڈیپارٹمنٹ ضلع مردان شاہ محمود ، محکمہ کے انسپکٹرز لال زادہ خان ، سردار بہادر ، محمد اسرار جمال ، محمد بلال کے علاوہ کثیر تعداد میں عمائدین علاقہ مایار موجو د تھے۔ محکمہ فشریز کے انسپکٹر لال زادہ خان نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اب تک ایک لاکھ کے قریب چار اقسام کی چھوٹی مچھلیاں بغدادہ گودر اور موضع مایار گودر میں چھوڑ دی گئی ہیں اور ضلع مردان میں 10لاکھ مختلف اقسام کی چھوٹی مچھلیاں مختلف مقامات پر چھوڑنا ہمارا ٹارگٹ ہے۔ ضلع ناظم نے کہا کہ پاکستان میں گوشت اور لحمیات کی کمی کی وجہ سے ہفتہ میں دودن گوشت کا ناغہ کیا جاتا ہے۔ اسکے علاوہ پولٹری مصنوعات کی قیمتیں بھی زیادہ استعمال کی وجہ سے اعتدال پر نہیں رہتیں ، اسی لئے ضلعی حکومت مچھلیوں کی پیداوار میں اضافہ کی خاطر مچھلی کی صنعت کو فروغ دینے کیلئے عملی اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چاربانڈہ میں واقع محکمہ فشریز کے دفتر میں مچھلیوں کے نئے تالابوں ، سڑکوں اور سولر سسٹم پر ضلعی حکومت مردان 78لاکھ روپے خر چ کررہی ہے۔ جس سے مچھلیوں کی افزائش نسل میں خاطر خوا ہ اضافہ ہوگا۔ انہوں نے محکمہ ماہ پروری کے حکام کو سختی سے ہدایت کی کہ مچھلیوں کے غیر قانونی شکار کو روکنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں۔ اس مقصد کیلئے ضلعی حکومت آئندہ بجٹ میں محکمہ ماہ پروری کے انسپکٹروں کو موٹر سا ئیکلوں کا بندوبست کریگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...