جندول ،گورنمنٹ ڈگری کالج ثمر باغ کے طلباء کا احتجاجی مظاہرہ

جندول ،گورنمنٹ ڈگری کالج ثمر باغ کے طلباء کا احتجاجی مظاہرہ

جندول(نمائندہ پاکستان) گورنمنٹ ڈگری کالج جندول ثمرباغ میں 2اکتوبر سے تدریسی سرگرمیاں بند ہونے پر کالج کے طلبہ نے شدید احتجاج کرتے ہوئے صدبر کلی کے مقام پر شاہرہ جندول کسی بھی ٹریفک کیلئے بند کر دیا ، احتجاج میں آئی ایس ایف،پی ایس ایف،آئی جے ٹی ،ایم ایس ایف سمیت تمام طلبہ تنظیموں نے حصہ لیا ، طلبہ عبد اللہ ،ارشد اور اظہار الحق وغیرہ نے موقف اختیار کیا کہ 2اکتوبر سے اساتذہ نے کلاسز کا بائیکاٹ کیاہوا ہے اور طلبہ کا قیمتی وقت ضائع کیا جا رہا ہے اساتذہ کہتے ہیں کہ صوبائی حکومت کالجز کو پرائیوٹائز کر کے طلبہ پر بھاری فیس عائد کرینگے جسے کسی صورت طلبہ قبول کرنے پر تیار نہیں ، طلبہ نے کہا کہ حکومت جلد از جلد اساتذہ کے جائز مطالبات منظور کر کے کالج میں تدریسی سرگرمیاں بحال کرنے کیلئے اقدامات اٹھائیں ورنہ طلبہ احتجاجی تحریک پر مجبور ہونگے،اس موقع پر ڈی ایس پی جندول اجمل خان اور ایس ایچ او ثمرباغ احمد علی موقع پر پہنچ گئے اور احتجاج کو منتشر کر کے ٹریفک کو بحال کر دیاطلبہ کے مطابق بار بار رابطہ کے باوجود علاقہ کے کسی بھی منتخب نمائندہ نے طلبہ کے مسائل سننے کیلئے احتجاج کی جگہ آنا گوارا نہیں کیاجس پر طلبہ نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...