قندیل بلوچ قتل کیس میں وارنٹ گرفتاری جاری نہیں ہوئے، پولیس کے ساتھ تعاون کیلئے تیار ہوں: مفتی عبدالقوی

قندیل بلوچ قتل کیس میں وارنٹ گرفتاری جاری نہیں ہوئے، پولیس کے ساتھ تعاون ...
قندیل بلوچ قتل کیس میں وارنٹ گرفتاری جاری نہیں ہوئے، پولیس کے ساتھ تعاون کیلئے تیار ہوں: مفتی عبدالقوی

  


ملتان (ڈیلی پاکستان آن لائن) مفتی عبدالقوی کا کہنا ہے کہ ان کے قندیل بلوچ قتل کیس میں کوئی وارنٹ گرفتاری جاری نہیں ہوئے یہ صرف ایک افواہ اڑائی گئی ہے۔ وہ پولیس کے ساتھ تفتیش میں مکمل تعاون کر رہے ہیں اور جو بھی ان سے دوبارہ رابطہ کرے گا اس کے ساتھ بھی مکمل طور پر تعاون کیا جائے گا۔

نجی ٹی وی سماءسے گفتگو کرتے ہوئے مفتی عبدالقوی نے کہا کہ ان کا قندیل بلوچ قتل کیس سے کوئی واسطہ نہیں ہے،جس دن وہ قتل ہوئیں تو اس دن وہ لاہور میں موجود تھے ۔ ’قندیل بلوچ کے اہل خانہ سے بھی میرا کوئی رابطہ نہیں ہے اور نہ ہی میں نے انہیں کبھی فون کیایا ڈرایا دھمکایا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ جب بھی کوئی ان سے رابطہ کرے گا تو وہ تفتیش میں مکمل طور پر تعاون کریں گے، پچھلے دنوں بھی ایس پی سے ملاقات ہوئی ہے اور ان کے سوالوں کے جوابات دیے۔

یہ بھی پڑھیں: قندیل بلوچ قتل کیس ، مفتی عبدالقوی کے ناقابل وارنٹ گرفتاری جاری

مفتی عبدالقوی نے اپنے وارنٹ گرفتاری کی خبروں کو افواہ قرار دیا اور کہا کہ وہ اس کیس میں عبوری ضمانت کرا چکے ہیں، خود کو عدالت کے سامنے پیش کردیا ہے اور وہاں سے انصاف ملے گا، ’ میرے وارنٹ جاری نہیں ہوئے اور نہ ہی مجھے اس کا علم ہے،یہ افواہ ہے اور بالکل غلط ہے، حلفاً کہتا ہوں کہ مجھے اس بارے میں کچھ علم نہیں ہے‘۔

مفتی عبدالقوی نے کہا کہ انہوں نے دینی تعلیم کے ساتھ ایل ایل بی بھی کر رکھی ہے اس لیے وہ قانون کو اچھی طرح سمجھتے ہیں اور قانون کے دائرے کے اندر رہ کر انصاف کے حصول کی جنگ لڑیں گے۔

واضح رہے کہ ملتان کی سیشن عدالت نے قندیل بلوچ قتل کیس میں تفتیش میں تعاون نہ کرنے پر مفتی عبدالقوی کے نا قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہیں۔

مزید : ملتان


loading...