مال روڑ اور بلڈنگ پر لائٹس لگانے اور زیبرہ کراسنگ لائن کا کام مکمل کرنے کا حکم

مال روڑ اور بلڈنگ پر لائٹس لگانے اور زیبرہ کراسنگ لائن کا کام مکمل کرنے کا حکم

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی اکبر قریشی نے مال روڈ اور ہال روڑ کو اصل حالت میں بحال کرنے کے لئے دائر درخواست پر مال روڑ اور بلڈنگ پر لائٹس لگانے ، مال روڑ پر زیبرہ کراسنگ لائن کا کام مکمل کرنے کا حکم دے دیا ہے جبکہ تمام سرکاری اور نجی بلڈنگ کا پینٹ جلد مکمل کرنے کا بھی حکم دیاہے۔ فاضل جج نے ایک ہفتہ میں عمل درآمد رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔عدالت میں درخواست گزار عبداللہ ملک کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ مال روڑ اور ہال روڑ کی حالت بہتر کرنے کے لیے جو کام کیا جا رہا ہے وہ سست روی شکار ہے ،جس سے تاجروں اور شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ایم ڈی ٹیپا نے عدالت کو بتایا کہ 15 روز کے اندر اندر تمام فٹ پاتھ کو مرمت کر دیا جائے گا ،عدالت نے تمام سرکاری اور نجی بلڈنگ کا پینٹ جلد مکمل کرنے کا بھی حکم دیا ہے ، مال روڑ انتظامیہ کی جانب سے عدالت کو بتایا گیاکہ مال روڑ سے بجلی اور ٹیلیفون کی وائرز ابھی تک ہٹائی نہیں گئی ہے جس پر فاضل جج نے چیف لیسکو اور جنرل مینجرپی ٹی سی ایل کو تاروں کے گچھے ختم کرنے سے متعلق عدالتی حکم پر فوری عمل درآمد کا حکم دیاہے،عدالت نے قرار دیا کہ عدالتی حکم پر عمل نہ کرنے والوں کوسخت کاروائی کا سامنا کرنا پڑے گا ،عدالت نے کیس پر مزید کارروائی ایک ہفتہ تک لئے ملتوی کر تے ہوئے عمل در آمد رپورٹ طلب کر لی ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...