بادامی باغ قبرستان کی اراضی پر ناجائز قبضہ کیخلاف درخواست پر حکام کو نوٹس

بادامی باغ قبرستان کی اراضی پر ناجائز قبضہ کیخلاف درخواست پر حکام کو نوٹس

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائیکورٹ نے لاری اڈا بادامی باغ قبرستان کی اراضی پر ناجائز قبضہ و تعمیرات کے خلاف درخواست پر سماعت کرتے ہوئے ڈی سی، لارڈ میٹر سمیت دیگر مدعاعلیہان کودوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے16 اکتوبر کو جواب طلب کر لیاہے۔عدالت نے شہری کبیر حسین شاہ کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست گزار کی طرف سے زاہد منہاس ایڈووکیٹ نے پیش ہو کر موقف اختیار کیا کہ قبضہ مافیا کے سرغنہ ارشد، عابد نے اپنے کارندوں کے ذریعے قبرستان کی تین کنال قبضہ کر لیاہے،قبضہ مافیا قبرستان کی اس اراضی پر دکانیں اور کمرے فروخت کررہا ہے۔محمد ممتاز حلقہ پٹواری بستی بیلہ رام کی ملی بھگت سے مافیا قبضے کررہا ہے۔قبضہ مافیا کے خلاف تھانہ لاری اڈا میں دو مقدمات بھی درج ہیں،مقدمات درج ہونے کے باوجود متعلقہ پولیس قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی نہیں کر رہی۔قبرستان کی اراضی پر ناجائز قبضہ سے اہل علاقہ مرحومین کی تدفین کرنا دشوار ہوگیاہے، درخواست گزار نے استدعا کی کہ قبرستان کی اراضی قبضہ مافیا سے واگزار اور ناجائز تعمیرات گرانے کا حکم دیا جائے۔عدالت نے ضلعی حکومت سمیت دیگر کو دوبارہ نوٹسز جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیاہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...