بادشاہی مسجدسے چوری ہونے والے نعلین پاک کی رپورٹ کی تیاری شروع

بادشاہی مسجدسے چوری ہونے والے نعلین پاک کی رپورٹ کی تیاری شروع

  



لاہور(نامہ نگار)سپریم کورٹ کے حکم پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب امتیازکیفی نے 2002ء میں بادشاہی مسجدسے چوری ہونے والے نعلین پاک کے مقام کادورہ کرکے رپورٹ تیارکرناشروع کردی ہے۔ ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے متبرک نوادرات کی سکیورٹی پراظہار عدم اعتمادکردیا،چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کے حکم کے بعد نعلین پاک کی گمشدگی کی انکوائری کے لئے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل امیتاز کیفی نے بادشاہی مسجد کا دورہ کیا ،ڈائریکٹر فنانس ملک عبد وحید ایس پی سی آئی اے عاطف حیات ایس پی سٹی انوسٹی گیشن نوید ارشاد سمیت سی آئی اے کے افسران بھی ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کے ہمراہ تھے ،انوسٹی گیشن ٹیم نے بادشاہی مسجد میں واقع متبرک تبرکات کے مقام میں مختلف حصوں کو دیکھا ،امیتاز کیفی ہفتے کے روز چیف جسٹس کو یہ رپورٹ پیش کریں گے،اس موقع پرصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے متبرک نوادرات کی حفاظت کے لئے اٹھائے گئے سیکیورٹی انتظامات پرانہوں نے عدم اطمینان کااظہارکیا۔انہوں نے کہا کہ نعلین پاک کی چوری میں ملوث عناصرکوہرصورت کیفرکردارتک پہنچائیں گے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...