خیبر پختونخوا میں جدید پراجیکٹس اور حکومتی اداروں میں اصلاحات متعارف کرائیں : کامران بنگش

خیبر پختونخوا میں جدید پراجیکٹس اور حکومتی اداروں میں اصلاحات متعارف کرائیں ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائیسا ئنس اینڈ انفا رمیشن ٹیکنا لو جی کا مران بنگش نے کہا ہے کہ ہم خیبر پختون خواہ میں جدید پراجیکٹس اور موجودہ دور کے تقاضوں کے عین مطابق حکومتی اداروں میں اصلاحات لائی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈائریکٹوریٹ آف ایس ٹی اینڈ آئی ٹی میں بلاک چین ٹیکنالوجی کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں جا ری کیا۔ کامران بنگش نے شرکاء کو اس ٹیکنالوجی کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ بلاک چین ایک پیر ٹو پیر سافٹ وئیر ٹیکنالوجی ہے، یہ ایک انتہائی محفوظ سافٹ ویئر ہے جس میں کسی قسم کی ہیکنگ ممکن نہیں ہے آج کل چونکہ ڈیجیٹل آلات کا زمانہ ہے اور ہمارے حکومتی اداروں میں بھی کاغذ کی جگہ کمپیوٹر نے لے لی ہے تو یہ ٹیکنالوجی ہمیں حکومتی اداروں میں اپنے ڈیجیٹل ڈیٹا کو محفوظ بنانے کے ساتھ ساتھ کرپشن پر قابو پا نے میں مدد دے گی کیونکہ اس ٹیکنالوجی کے ذریعے تیسری پارٹی کی مداخلت کے بغیر پیسے کی منتقلی، امتحانات کے نتائج اور اسی طرح دیگر امو سرنجام دئے جا سکتے ہیں جن سے بے ضابطگیوں کو کنٹرول کرنے میں کامیاب ہو گی ۔کامران بنگش نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے بد عنوانی سے پا ک پاکستان کا خواب دیکھا تھا جس کی تکمیل کا وقت آچکا ہے اور ہم سب اس میں اپنا کردار ادا کریں گے، ہم چوری کے تمام راستوں کو بند کریں گے، محکمہ ایس ٹی اینڈ آئی ٹی جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لاتے ہوئے ایک جا مع حکومتی نظام بنانے میں اپنا نمایا کردار ادا کرے گا، اجلاس میں شریک اعلیٰ سرکاری افسران و دیگر شرکاء نے اس منصوبے کے حوالے سے اپنی اپنی رائے کا اظہار کیا، معاون خصوصی نے ڈائریکٹوریٹ آف ایس ٹی اینڈ آئی ٹی کو اپنی سرپرستی میں ایک مضبوط اور مزید فعال ادارہ بنانے میں ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کروائی اور امید ظاہر کی کہ بہت جلد مطلوبہ اہداف حا صل کئے جائیں گے.

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...