ایم اینڈ آر ہائی وے ڈویژن لاہور کا قومی خزانہ کو 10کروڑ کا ٹیکہ

ایم اینڈ آر ہائی وے ڈویژن لاہور کا قومی خزانہ کو 10کروڑ کا ٹیکہ

  



لاہور(ارشد محمود گھمن/سپیشل رپورٹر)ایم اینڈ آرہائی وے ڈویژن لاہورکا قومی خزانہ کو 10کروڑ کا ٹیکہ، پنجاب حکومت کی طرف سے چند روز قبل محکمہ سی اینڈ ڈبلیوکو پنجاب بھر کی سٹرکوں کی مرمت کے لئے اڑھائی ارب روپے کے فنڈز جاری کئے گئے ۔اس وقت کے چیف انجینئر ایم اینڈ آر شفقت بٹرکی ناک تلے ایکسیئن ارشاد احمداور ایس ای خاورزمان نے کنٹریکٹرز کی مبینہ ملی بھگت سے فرضی ادائیگیاں کرنے کے لئے قومی خزانے سے 10کروڑ روپے نکلواکر آپس میں بندر بانٹ کرلئے ۔تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے پنجاب بھر کی ڈویژن کے ایکسیئن کو سٹرکوں کی مرمت کے لئے سیکرٹری سی اینڈ ڈبلیو کی درخواست پر 2ارب 50کروڑ روپے کے فنڈز جاری کئے جن میں چیف انجینئر ایم اینڈ آرنے ایم اینڈ آر ہائی وے ڈویژن لاہورکو لاہور،شیخوپورہ ،قصوراورننکانہ صاحب کی سڑکوں کی مرمت کے لئے 10کروڑ روپے کے فنڈز ٹرانسفر کئے ۔جن کو ایکسیئن ارشاد احمد اور ایس ای خاور زمان اور اس کے ماتحت عملہ نے کنٹریکٹرز کی مبینہ ملی بھگت سے سٹرکوں کی مرمت کے نام پر چند جگہوں پر’پیچ‘ لگا کر فرضی بل کے ذریعے بوگس ادائیگیاں کرکے قومی خزانے سے 10کروڑ روپے نکلوا کر آپس میں بندر بانٹ کرلئے ،ذرائع نے بتایا کہ لاہور سمیت چاروں اضلاع کی سٹرکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں مگر محکمہ کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لئے 3سے 10فٹ کے پیچ لگا کر قومی خزانہ سے کروڑوں روپے خورد برد کرلئے ۔اس حوالے سے موجودہ چیف انجینئر ساجد امین کا کہنا ہے کہ مجھے چارج سنبھالے ابھی دو روز ہوئے ہیں ،فنڈز کی ادائیگی کے بابت میرے علم میں نہیں ہے ،لہذا جاری کئی گئے فنڈز کی تفصیلات جاننے کے لئے معاملہ کی چھان بین کرکے ہی اصل حقائق سامنے آئیں گے ،جس کے بعد ذمہ دارو ں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

10کروڑ کا ٹیکہ

مزید : صفحہ اول


loading...