خیبر پختونخوا کے بعض ہائی رسک اضلاع میں 15اکتوبر سے پولیو مہم شروع ہو گی

خیبر پختونخوا کے بعض ہائی رسک اضلاع میں 15اکتوبر سے پولیو مہم شروع ہو گی

  



پشاور( سٹی رپورٹر )صوبہ خیبر پختو نخوا کے سات ہائی رسک اضلاع اورحال ہی میں صوبہ میں ضم ہونے والے آدم خیل اور حسن خیل کے سابقہ قبائلی علاقوں15اکتوبر سے12روزہ خصوصی انسداد پولیو مہم شروع ہو رہی ہیں جس کے دوران پا نچ سال سے کم عمر کے 20لاکھ سے زائد بچوں کو پولیوسے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے اس بات کا فیصلہ خیبر پختو نخوا کے ایمر جنسی آپریشن سنٹرخیبرپختونخوا ک میں ای او سی کوآرڈینیٹر میں محمد عابد خان وزیر کی زیرصدارت منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس میں کیا گیااجلاس میں صوبائی محکمہ صحت اور ای پی آئی کے اعلی حکام ، عالمی اد ارہ اطفال(یو نیسیف )،ڈبلیو ایچ او، بی ایم جی ایف اور دیگر معاون اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی اجلا س کو بتایا گیا کہ پولیو کے حوالہ سے صوبہ خیبر پختو نخوا کے 7ہائی رسک اضلاع پشاور، چارسدہ ، مردان ، نو شہرہ ، صوابی، ملاکنڈاورکوہاٹ کے ساتھ خیبرپختونخوا میں ضم ہونے والے سابقہ قبائلی علاقوں درہ آدم خیل اورحسن خیل میں یہ خصوصی انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی جس کے ساتھ یہاں بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کی ویکسینیشن مہم بھی چلائی جائے گی اجلاس کو بتایا گیا کہ چارسدہ میں 19ماہ کی عمر کے ارسلان کے پولیووائرس سے متاثر ہونے کے بعدیہ12روزہ خصوصی انسداد پولیومہم چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کوآرڈینیٹر محمد عابد وزیر نے کہا کہ پولیو ویکسین کی خوراکیں لینے کی وجہ سے چارسدہ کا کمسن بچہ ارسلان پولیو وائرس سے متاثر ہونے کے باوجود عمر بھی کی معذوری سے محفوظ رہا جس نے بچوں میں قوت مدافعت پیداکرنے کے لئے پولیو ویکسینیشن مہمات کی اہمیت اور افادیت مزید اجاگر کردی ہیانہوں نے کہا کہ مہم کے لئے 975آؤ ٹ ریچ ٹیمیں تشکیل دی گی ہیں جن میں 49ٹرانزٹ ٹیمیں شامل ہیں محمد عابد خان وزیرنے کہا کہ سال2018میں پورے پا کستان بھرسے پولیو کے صرف 4 کیس رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے 3بلو چستان اور 1کیس خیبر پختو نخوا سے سامنے آئے انہوں نے معاشرے کے تمام طبقات باالخصوص والدین سے اپیل کی کہ وہ ہر انسداد پولیو مہم کے دوران اپنے بچوں کو پولیو سے بچاؤکے قطرے پلاکر اپنے بچوں کو عمر بھر کی معذوری سے محفوظ رکھیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...