انجینئرنگ کونسل کودیامربھاشا ڈیم بنانے کا موقع دیں ، 200ارب بچائینگے، جاوید قریشی

انجینئرنگ کونسل کودیامربھاشا ڈیم بنانے کا موقع دیں ، 200ارب بچائینگے، جاوید ...
انجینئرنگ کونسل کودیامربھاشا ڈیم بنانے کا موقع دیں ، 200ارب بچائینگے، جاوید قریشی

  



اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان انجینئرنگ کونسل کے چیئرمین انجینئر جاویدسلیم قریشی نے حکومت کو پیشکش کی ہے کہ حکومت پاکستان انجینئرنگ کونسل کو دیامر بھا شا ڈیم کی تعمیر کا موقع فراہم کرے تو قوم کا 200ارب بچائیں گے، دیامر بھاشا ڈیم سے 30ہزار میگاواٹ بجلی پیدا ہو سکتی ہے، ڈیم کی سیسمک سٹڈی ہو چکی ہے ڈیم کی فیزیبلٹی رپورٹ تیار کرنے اور 50لاکھ سستے مکانات کی تعمیر کیلئے انجینئرنگ کونسل کی خدمات حاضر ہیں۔

روزنامہ جنگ کے مطابق جمعرات کو پاکستان انجینئرنگ کونسل میں میڈیا کو بریفنگ اور سوالوں کا جواب دیتے ہوئے چیئرمین پاکستان انجینئرنگ کونسل نے کہا کہ ڈیم کیلئے جمع شدہ پیسوں اور ڈیم کیلئے مختص فنڈ سے ایک پبلک لمیٹڈ کمپنی بنا دی جائے جس کے شیئرز مارکیٹ میں فروخت کے لیے پیش کردئیے جائیں، صرف ڈیم کی تکمیل کیلئے 500ارب روپے سے زائد رقم درکار ہے اور مکمل پراجیکٹ کی تکمیل کیلئے 1900ارب روپے کی ضرورت ہے۔

جاوید سلیم قریشی نے کہا کہ ملک کی پالیسی سازی میں انجینئرزکو نظر انداز کیے جاتے ہیں جس کی وجہ سے ملکی قرضہ روز بروز بڑھ رہا ہے،پالیسی سازی میں پروفیشنلز تعینات نہ ہونے کی وجہ سے جو منصوبے100ارب میں مکمل ہونا ہوتے ہیں وہ 250ارب سے تجاوز کر جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت گریڈ 22میں ایک بھی انجینئرنگ کا افسر نہیں،پلاننگ کمیشن میں صرف ایک انجینئر موجود ہے،50لاکھ سستے گھروں کی تعمیر آسان نہیں،سستے گھروں کی تعمیر کیلئے مخصوص جگہوں کو ذہن میں رکھنا لازم ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں چیئرمین پی ای سی نے کہا کہ ڈیم سے متعلق سیاسی پہلو پر متعلقہ فورم سے رجوع کیا جائے، ہمارا کام صرف تکنیکی پہلوؤں کو سامنے لانا ہے، پی ا ے سی ریگولیٹری باڈی ہے انتظامی نہیں۔ انہوں نے وزیراعظم سے ریلوے، ورکس، موا صلات اور انرجی کے شعبوں میں میرٹ کی بنیاد پر انجینئر ز کو تعینات کرنے کامطالبہ کیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...