کیا آپ کو معلوم ہے پیلے رنگ کی ٹینس بال دراصل کیوں ایجاد کی گئی؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کردے گا

کیا آپ کو معلوم ہے پیلے رنگ کی ٹینس بال دراصل کیوں ایجاد کی گئی؟ جواب آپ کے ...
کیا آپ کو معلوم ہے پیلے رنگ کی ٹینس بال دراصل کیوں ایجاد کی گئی؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کردے گا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی مصنفین جان لائیڈ، جیمز ہارکین اور اینی میلر نے ایک مشترکہ کتاب مرتب کی ہے جس میں انہوں نے دنیا کی ہزاروں ایسی عجیب اور منفرد باتیں تحریر کی ہیں کہ آدمی سن کر انگشت بدنداں رہ جائے۔ میل آن لائن کے مطابق کتاب میں ایک جگہ وہ لکھتے ہیں کہ ٹینس بال پہلے سفید رنگ کی ہوتی تھی۔ اسے پیلا رنگ دینے کا آئیڈیا بی بی سی 2کے کنٹرولر ڈیوڈ اٹینبرگ نے دیا۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ پیلے رنگ کی بال رنگین ٹی وی پر زیادہ خوبصورت نظر آتی تھی۔مصنفین کی تحریر کردہ کچھ مزید حیران کن باتیں مندرجہ ذیل ہیں۔

ہاتھی نے ایک پاﺅں زمین سے اٹھا رکھا ہو تو اسے زیادہ بہتر سنائی دیتا ہے۔ کارل مارکس نے اپنی آدھی سے زیادہ زندگی انگلینڈ میں گزاری۔ سالگرہ کے کیک پر موم بتیاں جلانے سے اس پر بیکٹیریا کی تعداد میں 1400فیصد سے زائد اضافہ ہو جاتا ہے۔ کھانے والے دنیا کے طویل ترین ’رول‘ کی لمبائی 39میل تھی۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران ’فِش اینڈ چِپ شاپ کے منیجرز کو فوج کی ملازمت سے مستثنیٰ رکھا گیا تھا۔ بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں اس قدر آلودگی ہے کہ اس شہر میں سانس لینا روزانہ 45سگریٹ پینے کے برابر ہے۔برطانوی وزیراعظم ونسٹن چرچل کے آخری الفاظ تھے ’میں اس سب کچھ سے اکتا چکا ہوں۔‘

مزید : ڈیلی بائیٹس