قادیا نیوں کو بنیادی عہدوں سے ہٹایا ، انکے تخریب کاراداروں پر پابندی لگائی جائے 

  قادیا نیوں کو بنیادی عہدوں سے ہٹایا ، انکے تخریب کاراداروں پر پابندی لگائی ...

چنیوٹ،چناب نگر(نمائندہ پاکستان ،نامہ نگار) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام مرکز ختم نبوت مسلم کالونی چناب نگر میں منعقد ہونےوالی سالانہ ختم نبوت کانفرنس حرمین شریفین کے تحفظ و ملکی سلامتی کی رقت آمیز دعا کے ساتھ اختتام پذیر ہوگئی۔ کانفرنس کی مختلف نشستوں سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اور دینی تعلیمات و اسلامی اقدار اور علماءکرام کو دیوار سے لگانے کی سازشیں ملک میں انارکی پھیلانا ہے۔ امتناع قادیانیت ایکٹ کی روشنی میں قادیانیوں کو اسلامی شعائر، کلمہ طیبہ اور قرآنی آیات کے استعمال سے منع کیا جائے۔ مقررین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ بنیادی عہدوں سے قادیانیوں کو ہٹایا جائے۔ شرکاءکانفرنس نے مطالبہ کیا کہ قادیانی تخریب کا ر ادارے اور عسکریت پسند تنظیمیں خدام الاحمدیہ ، انصار اللہ ، لجنہ اماءاللہ اور تنظیم اطفال الاحمدیہ پر مکمل پابندی عائد کی جائے۔ تفصیلات کے مطابق قائد جمعیت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت پاکستان محاذ ختم نبوت پر پوری قوم کو بیدار کرنے کا فریضہ سرانجام دے کر پوری امت پر احسان عظیم کر رہی ہے۔ ختم نبوت کا مسئلہ اسلام کا بنیادی عقیدہ ہے۔ پاکستان کا مذہبی طبقہ ناموس رسالت اور ختم نبوت کےلئے حساس تر رہا ہے۔ بائیس کروڑ عوام میں مذہبی طبقہ اپنے خاص ماحول میں دینی خدمت سرانجام دے کر اسلامی اقدار کو فروغ دے تو حکومت کو تشویش لاحق ہو جاتی ہے کہ یہ لوگ مذہب کے نام پر سیاست کر رہے ہیں۔

قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دینا کسی مولوی کا نہیں بلکہ منتخب پارلیمنٹ کا تاریخی فیصلہ ہے۔ پاکستان میں عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت پر جان قربان کرنے والے عاشقان رسول اب بھی موجود ہیں۔ہم قرآن و سنت کے قانون اور حضور اکرم کی ختم نبوت کا تحفظ چاہتے ہیں ہم ملک میں قرآن و سنت کا قانون چاہتے ہیں اسرائیلی ایجنڈا کی تکمیل نہیں ہونے دینگے ۔ مولانا شاہ اویس نورانی نے کہا کہ چاروں اطراف سے اسلام پر یہودو قادیانی لابیوں کے حملے بڑھ رہے ہیں میڈیا چینلز کا علماءکرام اور دینی قوتوں کی آزادی رائے کو کوریج نہ دینا سراسر ظلم اور ناانصافی ہے مذہبی طبقات کی تہذیب و مقاصدکو دنیا کی کوئی طاقت نہیں دبا سکتی۔عمران خاں کی دور حکومت میں کشمیر کو نقشے سے ہٹانااسرائیلی ایجنڈے کی تکمیل ہے۔مولانا عزیز الرحمن جالندھری نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت برصغیر کا پیچیدہ مسئلہ ہے۔ فتنہ قادیانیت کو عالمی استعمار کی مکمل حمایت حاصل رہی ہے اسی لئے مرزا قادیانی نے خود کہا کہ میں انگریز کا خود کاشتہ پودا ہوں۔ اس شجرہ خبیثہ کو کاشت بھی انہوں نے کیا،آب یاری انہوں نے کی اور آج پوری دنیا میں ان قادیانیوں کو تحفظ بھی یہی فراہم کر رہا ہے۔ فتنہ قادیانیت ہر اعتبار سے امت مسلمہ پر حملہ آور ہے۔ مفتی راشد محمود نے کہا کہ ہمارے تمام عقائد و اعمال کی بنیاد ختم نبوت کا عقیدہ ہے۔ ہم قرآن سنت اور اسلامی تعلیمات کی روشنی میں ناموس رسالت پر جان دینے کو سعادت دارین یقین کرتے ہیں۔ اسلام دشمن قوتیں توحید و سنت کے پروانوں کو منتشر کرنے کی سازشیں کر رہی ہے۔سید ضیاءاللہ شاہ بخاری نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت مسلمانوں کے لئے عظیم نعمت ہے۔ رسالت و نبوت کا سلسلہ منقطع ہوچکا امت میں سب سے پہلا اجماع عقیدہ ختم نبوت پر ہوا۔ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے اکابرین نے ختم نبوت کے پرچم کو سرنگوں نہیں ہونے دیا۔ مولانا محمد الیاس گھمن نے کہا کہ جس کا تعلق ختم نبوت سے نہیں ہے اس کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ دنیا کی تمام استعماری طاقتیں عقیدہ ختم نبوت سے ہمارا رشتہ توڑنا چاہتے ہیں اللہ تعالیٰ نے ہمیں اسلام اور ختم نبوت کا چوکیدار بنایا ہے ۔ مسجد و مذہب سے ڈرنے والے سن لیں کہ محمد عربیﷺ کے پروانے میدان میں آنے کو تیار ہیں۔ کشمیری مسلمان دو ماہ سے زیادہ عرصہ محصور ہیں۔ انسانی سیدکفیل بخاری نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت کی بدولت دین کے تمام شعبے مکمل طور پر میسر آئے، ایمانیات، عبادات، اخلاقیات، معاملات اور معاشرے کے تمام سلسلے کی عمارت عقیدہ ختم نبوت پر قائم ہے۔ ختم نبوت پر ایمان کے بغیر کوئی عبادت بھی بارگاہ ایزدی میں درجہ قبولیت کو نہیں پہنچتی۔ مولانا ڈاکٹرسعید اسکندرنے کہا کہ قادیانیوں کے اکھنڈ بھارت کے نظریات کے دستاویزی ثبوت ریکارڈپر ہیں، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کا مشترکہ پلیٹ فارم پاکستان کے استحکام اور سلامتی کی ضمانت دیتا ہے۔مولانا قاضی عبدالرشید ناظم پنجاب وفاق المدارس نے کہا کہ پاکستان ایک اسلامی ملک ہے جس میں اسلامی نظام کے نفاذ کے بغیر لوٹ مار اور کرپشن کا خاتمہ نہیں ہوسکتا۔ شیخ الحدیث مولانا عبدالمجید فاروقی چوک سرور شہید نے کہا کہ ختم نبوت پر ڈاکہ ڈالنے والے ہمیشہ ناکام و نامراد ہوئے اور مجاہدین ختم نبوت ہمیشہ کامیاب ہوئے۔ ختم نبوت کے کام کرنے کا بدلہ جنت ہے۔

ختم نبوت کانفرنس

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...