کراچی، نگلیریا کا  ایک اور مریض چل بسا

کراچی، نگلیریا کا  ایک اور مریض چل بسا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہرقائد میں نگلریاکاایک اور مریض چل بسا،مریض جناح اسپتال میں گزشتہ رات لایا گیاتھا۔محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق گزشتہ رات جناح اسپتال میں لائے گئے مریض کی ہلاکت کے بعد رواں سال کراچی میں نگلیریا سے اموات کی تعداد 15 ہو گئی ہے۔اسپتال ذرائع کے مطابق رشید آباد کے رہائشی 19 سالہ حمید اللہ کو گزشتہ رات جناح ہسپتال لایا گیا۔ ہسپتال کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر سیمیں جمالی کے مطابق مریض کو شعبہ ایمرجنسی میں وینٹی لیٹر پر رکھا گیا مگر وہ دوران علاج دم توڑ گیا۔نگلیریا کے متعلق ماہرینِ طب کا کہنا ہے کہ یہ جرثومہ پانی کے ذریعے انسانی دماغ کو متاثر کرتا ہے، نگلیریا کا جرثومہ بڑھتی ہوئی گرمی میں افزائش پاتا ہے۔ماہرینِ طب کا مزید کہنا ہے کہ نگلیریا انسانی جسم میں ناک کے ذریعے دماغ میں داخل ہو تا ہے اور ناک کی جھلی سے گزر کر یہ طفیلی امیبا قوتِ شامہ سے منسلک اعصاب کو نقصان پہنچاتے ہوئے دماغ کے اندر داخل ہو کر دماغی خلیات کو اپنی غذا بناتا ہے، اسی بنا پر اسے دماغ کھانے والا امیبا کہا جاتا ہے۔ماہرینِ طب نے نگلیریا کے جرثومے سے محفوظ رہنے کے لیے شہریوں کو ہدایت کی ہے کہ پانی ابال کر استعمال کریں اور پانی کے ٹینکوں میں کلورین کی مقدار بین الاقوامی معیار کے مطابق استعمال کریں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...