دیہی خواتین کو با اختیار کاریگر بنانے میں مددکرینگے، سام سنگ

دیہی خواتین کو با اختیار کاریگر بنانے میں مددکرینگے، سام سنگ

لاہور(پ ر)خواتین کی معاشی بہتری اور زیادہ مواقع فراہم کرنے کی غرض سے سام سنگ نے کاروان کرافٹس فاؤنڈیشن اور پنجاب اسکلز ڈیولیپمنٹ فنڈ کے تعاون سے آنگن کا دوسرے ایڈیشن متعارف کرا دیا ہے۔آنگن پاکستانی دیہی خواتین ا ور ان کے فن کو سراہتے ہوئے ان کے لئے معاشی وسائل کے خلا کو پر کر ے گا۔اس سال ایم او یو پر دستخط کی تقریب لاہور میں سام سنگ ہیڈ آفس میں منعقد ہوئی۔ سام سنگ الیکٹرونکس پاکستان کے مینجنگ ڈائیریکٹرجناب را ئے چینگ، کاروان کرافٹس فاؤنڈیشن کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر جناب دانش جبار خان اور پنجاب اسکلز ڈیولیپمنٹ فنڈ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر جواد خان نے یاد داشت پر دستخط کئے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جناب رائے نے کہا کہ سام سنگ میں گلوبل کارپوریٹ سیٹیزن شپ کا نظریہ لوگوں کو کارو باری اعتبار سے قابل بنانا ہے۔ ہم آئندہ نسلوں کوتعلیم سے آراستہ کر کے، مستقبل کے موجدوں کو اس قابل بناتے ہیں کہ وہ اپنے مقاصد حاصل کر لیں اور مستقبل کے رہنما بن کر سماجی اور معاشرتی تبدیلیاں ممکن بنائیں۔آ نگن ایک ایسا اقدام ہے جس کا مقصد پنجاب کے مختلف علاقوں کی کاروباری خواتین کی زندگی میں حیران کن انقلاب لانا ہے۔ آنگن کا قیام ایک سال قبل کاروان کرافٹس فاؤنڈیشن کے تعاون سے 80چھوٹی کاروباری خواتین کے ساتھ شروع ہوا جس نے کامیابی کے جھنڈے گاڑتے ہوئے ان کاروباری خواتین کی اوسط سے 12%اضافی آمدنی کے مواقع فراہم کئے۔

اس سال، اس پروگرام کا دائرہٗ کارومیں 140کاروباری خواتین کو شامل کیا جائے گا جن میں پنجاب اسکلز ڈیولیپمنٹ فنڈ کے زیر اہتمام اسکلز فار مارکیٹ لنکیجز (SMFL)کی طالبات بھی شامل ہیں، جن کو آنگن کی مارکیٹ پلیس کے ذریعے مارکیٹ تعلقات مہیا کئے جائیں گے اور ہنر مند خواتین کو کاروباری خواتین میں ڈھالا جائے گا۔ آنگن ایک جامع حکمتِ عملی ہے جو دیہی خواتین کو جامع ترین تربیتی کورسز فراہم کرتا ہے جس میں ہنر میں مہارت، مصنوعات میں بہتری اور ڈیجیٹل تعلیم شامل ہیں۔ اس پروگرام کے ذریعے انہیں جدید ترین سمارٹ فونز، انٹرنیٹ اور آن لائن مارکیٹ پلیس شامل ہیں جہاں پر وہ رجسٹر کر کے پاکستان بھر میں اپنی مصنوعات براہِ راست صارفین کو فروخت کر سکتی ہیں اور اس طرح دیہی خواتین کی معاشی اور معاشرتی اہلیت میں ا ضافہ ہو سکتا ہے جس سے وہ اپنے ذاتی، خاندانی اور معاشرے پر خوش کن اور مثبت اثرات مرتب کر سکتی ہیں۔

مزید : کامرس


loading...