اغوا کے بعد بچہ قتل ‘ تفتیش ‘ماں گرفتار ‘ واردات کا بھی اعتراف

  اغوا کے بعد بچہ قتل ‘ تفتیش ‘ماں گرفتار ‘ واردات کا بھی اعتراف

خانیوال(نما ئندہ پاکستان،نامہ نگار)تھانہ صدر کبیروالہ کے علاقہ میں 12 سالہ بچے کے اغواءکے بعد قتل کے معاملہ کا ڈراپ سین ہوگیا۔ ماں ہی اغواءکار اور قاتلہ نکلی۔ تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عمر سعید ملک نے پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں کو بتایا کہ یکم اکتوبر 2019 کو تھانہ صدر کبیر والہ کے علاقہ چک شیر خان کبیر والہ کے رہائشی 12 سالہ رضوان ولد منظور چک شیر خان کی ماں فیضان (بقیہ نمبر35صفحہ12پر )

بی بی 9 ۔اکتوبر کو تھانہ صدر کبیر والہ آئی اور اپنے بیٹے رضوان ولدمنظور کے اغواءبارے بتایا اور مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی جس پر مقدمہ نمبر 378/19 مورخہ 09/10/2019 بجرم 363 ت پ تھانہ صدر کبیر والہ درج کیا گیا دوران تفتیش شبہ پر ملزمہ خاتون کو شامل تفتیش کیا گیا تو اس نے انکشا ف کیا اس نے اپنے بیٹے کو آشناءاسلم ولد ربنواز کے ساتھ مل کر قتل کر دیاہے ڈی پی او عمر سعید ملک نے مزید بتایا کہ خاتون ملزمہ فیضاں بی بی اور اسکے آشناءاسلم کو متعلقہ پولیس نے گرفتار کر لیا اور مزید تفتیش جاری ہے

ماں قتل نکلی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...