دھرنے کی سیاست کے پیچھے مقاصد کچھ اور ہی ہیں: وزیر خارجہ 

    دھرنے کی سیاست کے پیچھے مقاصد کچھ اور ہی ہیں: وزیر خارجہ 

ملتان (آئی این پی) وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ14اکتوبر برطانوی شاہی جوڑا چاروزہ  خیرسگالی دورے پر پاکستان آرہا ہے،برطانوی قیادت دونوں ممالک کی دوستی کے اس رشتے کو نئی نسل تک منتقل کرنا چاہتی ہے، عالمی میڈیا کو ہانگ کانگ میں احتجاج نظر آ جاتا ہے لیکن مقبوضہ وادی میں دو ماہ سے لگا ہوا کرفیو نظر نہیں آتا، کچھ قوتیں چاہتیں کہ مسلمان آپس میں بکھرے رہیں،پاکستان کی خواہش ہے کہ دو اسلامی برادر ملکوں میں اختلافات نہ ہوں غلط فہمیاں دور ہوں،  بھارت کو بار بار منہ کی کھانی پڑے گی،27اکتوبر وہ منحوس دن ہے جس دن بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں قبضہ کیااور یہ وہ دن ہے جس روز بھارتی فوج سرینگر میں داخل ہوئی۔جمعہ کو ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان کے سعودی عرب کے ساتھ گہرے تعلقات ہیں اور دونوں ممالک اسٹرٹیجک پارٹنرز ہیں جبکہ ایران پاکستان کا پڑوسی اور دوست ملک ہے جبکہ پاکستان کی خواہش ہے کہ دو اسلامی برادر ملکوں میں اختلافات نہ ہوں، کوشش کر رہے ہیں کہ دونوں برادر ممالک میں غلط فہمیاں دور ہوں جبکہ یہ خطہ کسی غیر یقینی صورتحال کا متحمل نہیں ہو سکتا اور کچھ قوتیں چاہتیں کہ مسلمان آپس میں بکھرے رہیں۔ وزیرخارجہ نے کہا کہ بھارت پاکستان کو فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے ذریعے بلیک لسٹ کرانے کی کوشش کررہا ہے، لیکن انشاء اللہ بھارت کبھی بھی کامیاب نہیں ہو سکے گا، بھارت کو بار بار منہ کی کھانی پڑے گی،جنہیں 2014میں جمہوریت کے ڈی ریل ہونے کا خدشہ تھا تو آج اس کا خدشہ نہیں ہے کیا؟میں بھی جانتا ہوں اور میڈیا میں گہری نظر رکھنے والے بھی جانتے ہیں کہ دھرنے کی سیاست کے پیچھے مقاصد کچھ اور ہیں لیکن دکھایا جا رہا ہے کہ کشمیر کے ساتھ یکجہتی کر رہے ہیں۔

وزیرخارجہ 

مزید : صفحہ اول


loading...