قصور،اجرت نہ دینے پر 50 کمرشل اداروں کیخلاف مقدمات درج

قصور،اجرت نہ دینے پر 50 کمرشل اداروں کیخلاف مقدمات درج

  

قصور (بیورورپورٹ)سیکرٹری لیبر پنجاب کے حکم پر لیبر ڈیپارٹمنٹ کی مختلف اداروں کے خلاف کاروائی۔طے شدہ اجرت نہ دینے پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیبر قصور اور لیبر انسپکٹرز نے 50 کمرشل اداروں کیخلاف مقدمات درج کرا دیئے لیبر انسپکٹر رانا آزاد کے مطابق مختلف اداروں کے مالکان جبری کام، کم اجرت، زائد اوقات کار کے جرائم میں ملوث تھے۔ تفصیل کے مطابق محکمہ لیبر قصور نے مزدور کی مقررکردہ کم از کم اجرت،زائد اوقات کار اور اوو ٹائم کی خلاف ورزی کرنے والے کاروباری و کمرشل اداروں کے خلاف کریک ڈاؤن کاآغاز کرتے ہوئے مالکان اور انتظامیہ کے خلاف 50مقدمات درج کروا دیئے ہیں سیکرٹری لیبر پنجاب احمد جاوید قاضی،ڈائریکٹر جنرل لیبرساؤتھ ضیغم مظہر اور سید غضنفر علی ڈپٹی ڈائریکٹر لیبر قصور کی ہدایت پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیبر قصور اور لیبر انسپکٹرز نے کم از کم اجرت کے قوانین کی خلاف ورزی، زائد اوقات کاراور عدم ادائیگی اووٹائم کی بابت چار روزہ مہم کے سلسلہ میں 150 سے زائد کمرشل اداروں کا دورہ کیااور 50کمرشل اداروں کے خلاف متعلقہ قوانین کی خلاف ورزی پر کارروائی کرتے ہوئے چالان متعلقہ عدالتوں میں بھجوا دیئے ہیں۔ 

لیبر انسپکٹر رانا آزاد کے مطابق مختلف اداروں کے مالکان جبری کام، کم اجرت، زائد اوقات کار کے جرائم میں ملوث تھے اوراداروں کے مالکان کے خلاف مقدمات کے چلان بھی متعلقہ عدالت کو بھیج دئیے گئے ہیں۔

مزید :

علاقائی -