صدارتی آرڈیننس کیخلاف نیشنل پارٹی کا دھرنا

صدارتی آرڈیننس کیخلاف نیشنل پارٹی کا دھرنا

  

ڈیرہ اللہ یار(این این آئی)بلوچستان کے جزائر پر وفاقی تسلط اور صدارتی آرڈیننس کے اطلاق کے خلاف ڈیرہ اللہ یار میں نیشنل پارٹی نے احتجاجی ریلی نکال کر مظاہرہ کیا اورصوبے کے جزائر پر وفاقی تسلط اور صدارتی آرڈیننس کو اکائیوں کی وحدانیت پر وار قرار دیکر بھرپور سیاسی جدوجہد جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے نیشنل پارٹی نے ضلعی سیکرٹریٹ سے ایک پر امن احتجاجی ریلی نکال کر شہر کے مختلف راستوں سے مارچ کرتے ہوئے مرکزی مزدور چوک پر پہنچ کر دھرنا دیا اس موقع پر احتجاجی دھرنے سے نیشنل پارٹی کے ضلعی جنرل سیکرٹری واجہ راوت بلوچ کامریڈ محمد نواز کھوسہ لقمان کھیازئی ودیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاق بلوچستان اور سندھ کے جزائر پر قبضہ کرکے صوبوں کی ملکیت ہتھیانا چاہتا ہے وفاق کا جزائر پر قبضے کی کوشش اور صدارتی آرڈیننس کا نفاذ اکائیوں کی وحدانیت پر کھلم کھلا حملہ ہے جس کے باعث صوبوں میں پائی جانے والی احساس محرومی مزید بڑھے گی اور وفاق کمزور ہوگا انکا کہنا تھا کہ صوبوں کے جزائر صوبوں کی ملکیت ہیں کسی بھی صورت اپنی ملکیت پر وفاقی قبضہ برداشت نہیں کرسکتے پارلیمنٹ کی موجودگی میں صدارتی آرڈیننس کا نفاذ آئین سے انحرافی اور صوبوں کے اختیارات پر براہ راست وار ہے نیشنل پارٹی جزائر پر وفاقی قبضے اور صدارتی آرڈیننس کے نفاذ پر بھرپور سیاسی مزاحمت کرے گی اور کسی بھی صورت بلوچستان کے جزائر پر وفاقی قبضہ اور صدارتی آرڈیننس پر سمجھوتہ نہیں کرے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ تمام قوم پرست جماعتیں و سول سوسائٹی صوبے کی حق حاکمیت اور ملکیت پر قبضہ کے خلاف بھرپور آواز اٹھائیں۔

نیشنل پارٹی احتجاج

مزید :

صفحہ آخر -