کراچی میں مذہبی رہنماؤں پر دہشتگردانہ حملے کی مذمت کرتے ہیں،علماء کرام

  کراچی میں مذہبی رہنماؤں پر دہشتگردانہ حملے کی مذمت کرتے ہیں،علماء کرام

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مولانا عزیز الرحمن ثانی، مبلغ ختم نبوت مولانا عبدالنعیم، مولاناعلیم الدین شاکر، پیررضوان نفیس، قاری جمیل الرحمن اختر، مولانا حافظ محمداشرف گجر، مولانا خالد محمود نے ممتاز عالم دین،وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے مرکزی رہنما، جامعہ فاروقیہ کراچی کے مہتمم مولانا ڈاکٹر عادل خان اور ان کے ساتھیوں کی کراچی میں دہشتگردی کی کارروائی کے نتیجے میں شہادت پر گہرے رنج و غم اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے واقعے کو ملک دشمن عناصر کی کارروائی قرار دیا اور کہا کہ مولانا عادل خان کو ٹارگٹ کر کے ملک میں امن و امان کو خراب کرنے کی سازش کی گئی ہے، ان کا کہنا تھا کہ مولانا عادل خان کی جدوجہد سے خائف قوتوں نے ان کو راستے سے ہٹانے کیلئے اوچھا ہتھکنڈا اختیار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کراچی واقعے کے مجرموں کو فوری گرفتار کر کے قراواقعی سزا دی جائے۔

 مجلس تحفظ ختم نبوت کے رہنماؤں نے مولانا ڈاکٹر عادل خان پر حملے کو پاکستان کے امن اور تمام علماء  کرام اور اہل مدارس پر حملہ قرار دیامولانا ڈاکٹر عادل خان کی شہادت عالم اسلام کے لیے ناقابل تلافی نقصان ہے۔ علماء  نے مولانا ڈاکٹر عادل خان اور ان کے رفقاء  کے درجات کی بلندی اور لواحقین کے لیے صبر جمیل کی دعا کی۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -