شیخ الحدیث مولانا عادل کا قتل بہیمانہ فعل ہے:مولانا بلال قاسمی

شیخ الحدیث مولانا عادل کا قتل بہیمانہ فعل ہے:مولانا بلال قاسمی

  

 پشاور(سٹی رپورٹر) اہلسنت والجماعت پشاور کے ذمہ داران نے کراچی واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ شیخ الحدیث مولانا ڈاکٹر عادل خان شہید رحمتہ اللہ علیہ  کی قربانی رنگ لائے گی اور تحریک ناموس صحابہ اپنی منزل تک پہنچ کہ رہے گی۔ان خیالات کا اظہار اہلسنت والجماعت پشاور کے امیر مفتی نجیب اللہ فاروقی، جنرل سیکرٹری جناب بابو معاویہ صاحب، ضلعی سیکریٹری اطلاعات مولانا محمد بلال قاسمی، اور دیگر رہنماوں نے مرکز اہلسنت میں خطاب کرتے ہوئے کہاانہوں نے مزید کہا قاتل ڈھکے چھپے نہیں ہیں۔اہلسنت علما اور اہلسنت رہنماؤں کافی عرصہ سے غیر محفوظ ہیں اہلسنت علماء کرام اور اہلسنت  رہنماوں کی ٹارگٹ کلنگ وقفے وقفے سے جاری ہے سندھ حکومت اہلسنت علمائے کرام اور اہلسنت رہنماؤں کو تحفظ فراہم کرنے میں سنجیدہ نہیں ہے۔کیا پاکستان میں صحابہ کی عظمت کی بات کرنا اتنا بڑا جرم بن چکا ہے؟مقدسات کی توہین اور پھر اس کا دفاع کرنے والوں کو شہید کرنا۔اخر ملک کو کس جانب لے جایا جارہا ہے؟ملک بھر کی طرح پشاور میں بھی صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کی گستاخی کرنے والوں کے خلاف پشاور کے 2 تھانوں (گلبہار اور غربی صدر) میں ایف آئی آر درج کرنے کی درخواست موجود ہے مگر تاحال کوئی کارروائی نہیں کی گئی افسوس صد افسوس معلوم ہوتا ہے کہ اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں اسلامی شخصیات کیلئے کوئی گنجائش نہیں ہم صوبائی حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کے گستاخوں کو فی الفور گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچائیں۔ہم صوبائی حکومت خیبرپختونخوا کو بھی بار بار متنبہ کرتے آئے ہیں کہ اہلسنت رہنما مسلسل دہشتگردوں کی ہٹ لسٹ پر ہیں۔لیکن صوبائی حکومت تحفظ اور سیکیورٹی فراہم کرنے میں عدم دلچسپی کا مظاہرہ کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ قاتلوں کو فوی گرفتار نہیں کیا گیا تو احتجاجی تحریک شروع کی جائے گی۔ انہوں نے  مزید کہا دہشتگردوں اور ان کے سرپرستوں کو گرفتار کرکہ سرعام سزا دی جائے۔

مزید :

علاقائی -