قوم ستوری خیل کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھا گیا‘ ملک شاہ

قوم ستوری خیل کو بنیادی سہولیات سے محروم رکھا گیا‘ ملک شاہ

  

باڑہ(نمائندہ پاکستان)قوم ستوری خیل کو تباہ شدہ مکانات سروے، ترقیاتی منصوبوں، تعلیم اور مختلف محکموں کے بھرتیوں سمیت دیگر بنیادی سہولیات سے محروم رکھا گیا ہے تباہ شدہ مکانات ویران پڑے ہیں دس ہزار آبادی کیلئے ایک تعلیمی ادارہ نہیں، علاقے میں کوئی ترقیاتی منصوبہ نہیں کیا جا ریا ہے۔ ان خیالات کا اظہار قبیلہ ستوری خیل کے چیف ملک شاہ میر خیل نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ہر قبیلے کو تباہ شدہ مکانات سروے ٹیم دیدیا ہے لیکن قبیلہ ستوری خیل کو نظرانداز کیا گیا ہے جو 80 فیصد گھر سروے سے راہ چکے ہیں انہوں نے کہا کہ تمام قبیلوں میں ترقیاتی کام قومیت کے بنیاد پر جاری ہے اور ساتھ ہی ہمارے پسماندہ علاقہ نظرانداز کرکے ہمارے ساتھ ناانصافی کی ثبوت ہے۔انہوں نے کہا کہ قبیلہ ستوری خیل وہ واحد علاقہ ہے جہاں پر دس ہزار آبادی کیلئے ایک تعلیمی ادارہ نہیں جس کا مقصد ہمارے بچوں کو تعلیم سے محروم رکھنے کے مترادف ہے۔انہوں نے حکومت، ضلعی انتظامیہ خیبر اور منتخب نمائندوں سے مطالبہ کیا ہے کہ جلد از جلد ستوری خیل میں تباہ شدہ مکانات سروے ٹیم مقرر کیا جائے اور ساتھ ہی ہمارے پسماندہ علاقہ ستوری خیل میں ترقیاتی منصوبے اور تعلیمی ادارے تعمیر کیا جائے۔ورنہ اگر ہمارے مطالبات پورا نہ کیں گئے تو قبیلہ ستوری خیل اپنے جائز مطالبات کے حصول کیلئے سڑکوں پر نکل کر احتجاجی تحریک شروع کر دینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -