اپوزیشن کی سابق حکمران پارٹیاں پی ٹی آئی  حکومت کی سہولت کار بن گئیں، ذیشان اختر

اپوزیشن کی سابق حکمران پارٹیاں پی ٹی آئی  حکومت کی سہولت کار بن گئیں، ذیشان ...

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب (بقیہ نمبر7صفحہ6پر)

سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہہ وزیر اعظم دوسال میں صرف سونامی لانے کا اپنا وعدہ پورا کرسکے ہیں۔آج ہر طرف مہنگائی اوربے روزگاری کا سونامی ہے جس میں عوام ڈوب رہے ہیں۔ حکمرانوں نے پاکستان کے عزت ووقار کو نیلام کردیا ہے۔ایٹمی پاکستان کا پاسپورٹ دنیا بھر میں بے توقیر ہوچکا ہے ۔اپوزیشن کی سابقہ حکمران پارٹیاں دوسال سے حکومت کی سہولت کار بنی ہوئی ہیں۔پیپلز پارٹی،مسلم لیگ اور پی ٹی آئی میں ایک کلب کے لوگ ہیں۔یہ تینوں پارٹیاں ظلم و جبر اور اسٹیٹس کو کا نظام مسلط رکھنا چاہتی ہیں۔عوام اس ظالمانہ نظام سے نجات کیلئے جماعت اسلامی کا ساتھ دیں۔انہوں نے کہا کہ ورلڈ بنک کی رپورٹ ہے کہ آئندہ دوسالوں میں معیشت کی شرح نمو صفر اعشاریہ پانچ رہے گی جس کا مطلب ہے کہ ملک میں مہنگائی،بے روزگاری اورغربت مزید بڑھے گی۔پہلے ہی مہنگائی نے عام آدمی کی کمر توڑ دی ہے۔آٹا،چینی،گھی اور سبزیاں غریب کی پہنچ سے باہر ہوگئی ہیں۔عام آدمی فاقوں پر مجبور ہے۔مزدرو اور کسان کیلئے دو وقت کی روٹی کمانا مشکل ہوچکا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک کی مجموعی آمدن میں سے آدھی سود کی ادائیگی میں چلی جاتی ہے،حکومت مہنگائی اور بے روز گاری میں کمی کی بجائے اضافہ کررہی ہے اور ٹیکسوں میں اضافے کیلئے نئی کمیٹیاں بٹھا دی گئی ہیں۔انہوں نے مغربی سرمایہ دارانہ نظام منڈی کو اپنے قبضہ میں کرنے کیلئے تمام پالیسیاں بناتا ہے جبکہ اسلام کا سود سے پاک نظام معیشت عام آدمی کو ریلیف دینے کیلئے پالیسیاں بناتا ہے۔اسلام معیشت کو ٹھیک کرنے کیلئے دولت کے ارتکاز کو روکتا ہے۔امیروں سے لیکر غریبوں میں تقسیم کرتا ہے۔یتیموں،بے واؤں اور حاجت مندوں کی کفالت کرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ظلم کا نظام ہے جو زیادہ دیر قائم نہیں رہ سکتا۔عوام کو اس نظام سے بغاوت کیلئے نکلنا اور جماعت اسلامی کا ساتھ دینا ہوگا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -