اپنی آنکھوں سے تجھ کو دُور کیا| محبوب خزاں |

اپنی آنکھوں سے تجھ کو دُور کیا| محبوب خزاں |
اپنی آنکھوں سے تجھ کو دُور کیا| محبوب خزاں |

  

دوسری کروٹ

اپنی آنکھوں سے تجھ کو دُور کیا

تیرے پرتو سے کسبِ نور کیا

میں  نے تجھ پر ستم ضرور کیا

دن ہے جانکاہ رات ہے دلگیر

جاگتی ہے خیال کی زنجیر

میرے دل تونے کیا قصور کیا

شاعر: محبوب خزاں

(شعری مجموعہ:اکیلی بستیاں؛سالِ اشاعت،1979)

Doosri   Karwat

Apni   Aankhon   Say   Tujh   Ko   Door   Kiya

Teray   Partao   Say   Kasb-e-Noor   Kiya

Main   Nay   Tujh   Par   Sitam   Zaroor   Kiya

Din hay   Jaankaah   Rat   Hay   Dilgeer

Jaagti   Hay   Khayaal  Ki   Zanjeer

Meray   Dil   Tu   Nay   Kaya   Qasoor   Kiya

Poet: Mahboob   Khizan

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -