مولانا ڈاکٹر عادل خان کی شہادت، 2 پڑوسی ممالک کے ملوث ہونے کے شواہد مل گئے

مولانا ڈاکٹر عادل خان کی شہادت، 2 پڑوسی ممالک کے ملوث ہونے کے شواہد مل گئے
مولانا ڈاکٹر عادل خان کی شہادت، 2 پڑوسی ممالک کے ملوث ہونے کے شواہد مل گئے
کیپشن:    سورس:   Social Media

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) نجی ٹی وی سماء کے مطابق مولانا ڈاکٹر عادل خان کی شہادت میں 2 پڑوسی ممالک کے ملوث ہونے کے شواہد مل گئے ہیں۔

نجی ٹی وی نے سی ٹی ڈی ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ مولانا ڈاکٹرعادل خان کی شہادت کے کیس میں پولیس کے پاس سی سی ٹی وی فوٹیج اور گولیوں کے خول موجود ہیں۔ ملزمان کس گروہ سے ہیں، اور اس گروہ میں کتنے افراد ہیں یہ ابھی تک معلوم نہیں ہوسکا ہے تاہم یہی گروہ مفتی تقی عثمانی پر حملے میں بھی ملوث تھا۔

پولیس کی جانب سے مولانا عادل خان کے قتل کا مقدمہ بھی درج نہیں کیا گیا کیونکہ اہلخانہ نے انکار کردیا ہے جس کے بعد سرکار کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا جائے گا۔ 

انٹیلی جنس اطلاعات تھیں کہ کراچی جیسے شہر میں ایسے واقعات ہوسکتے ہیں کیونکہ بعض ایسے فون ٹیپ ہوئے تھے جن میں ایسے واقعات کا پتہ چلا تھا،  پہلے بھی ایسی کوششیں کی گئیں لیکن وہ ناکام ہوگئیں۔

سماء ٹی وی کے مطابق مولانا ڈاکٹر عادل خان کی ٹارفٹ کلنگ میں ملوث دہشتگرد گروپ یہاں کا مقامی ہے لیکن انہیں فنڈنگ 2 پڑوسی ممالک  کی جانب سے کی گئی۔ گورنر سندھ نے بھی کہا ہے کہ ایسے شواہد ملے ہیں کہ یہ ممالک دہشتگرد گروپوں کو فنڈنگ کر رہے تھے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -