آن لائن مارکیٹنگ کا سیاحت کے فروغ میں اہم کردار ہے

آن لائن مارکیٹنگ کا سیاحت کے فروغ میں اہم کردار ہے

انٹرویو : مبشر میر ، غلام مرتضی

تصاویر: عمران گیلانی

تعارف : نادین ملک، ایم ڈی، jovago.com

نادین ملک نے بزنس ایجوکیشن میں ماسٹر ڈگری حاصل کی ہے اور دنیا کے بہترین اداروں میں پیشہ وارانہ خدمات انجام دے کر مارکیٹنگ اور مینجمنٹ کے شعبوں میں مہارت حاصل کی ہے۔ انہوں نے امریکہ سے تعلیم کے حصول کے بعد سٹی بینک پاکستان میں خدمات سرانجام دیں۔ نادین ملک نے فرانس سے ایم بی اے کی ڈگری حاصل کی،جبکہ سنگاپور اور دبئی کے مختلف اداروں میں کلیدی عہدوں پر کام کرتی رہی ہیں۔ 2014ء میں جرمن کمپنی راکٹ انٹرنیٹ سے منسلک ہوئیں اور پاکستان میں jovago.com کا آفس قائم کیا ۔ وہ اس ادارے میں بطور ایم ڈی خدمات سرانجام دے رہی ہیں ۔ روزنامہ پاکستان نے ان سے خصوصی گفتگو کی ہے جس کا احوال قارئین کی نذر ہے۔

بزنس پاکستان: jovago.com کے حوالے سے کچھ بتائیں ؟

نادین ملک : jovago.com ایک ویب سائٹ جو اپنے صارفین کو دنیا بھر میں موجود 20ہزار سے زائد ہوٹلوں کے بارے میں مکمل معلومات اور آن لائن مارکیٹنگ کی سہولت فراہم کرنے سے قبل افریقہ میں بڑی کامیابی سے کام کررہا ہے ۔ ہمارے ادارے نے کچھ عرصہ قبل ہی پاکستان میں کام شروع کیا اور انتہائی قلیل مدت میں ملک بھر کے 150 شہروں میں موجود دو ہزار سے زائد ہوٹلوں کو آن لائن مارکیٹنگ کی خدمات فراہم کررہا ہے۔ ہماری ویب سائٹ میں پاکستان کے اہم مقامات پر موجود ہوٹلوں کے بارے میں مکمل معلومات فراہم کی گئی ہیں۔ جس سے استفادہ حاصل کرتے ہوئے صارفین گھر بیٹھے ہی اپنے مطلوبہ ہوٹل کے بارے میں معلومات حاصل کرسکتے ہیں اور کمرہ بک کروا سکتے ہیں۔ jovago.com نے مئی 2014ء میں پاکستان میں اپنے کام کا آغاز کیا۔ اس وقت کمپنی میں صرف 4 افراد کام کررہے تھے ، لیکن اب ان کی تعداد بڑھ کر 50 سے زائد ہوگئی ہے۔ جس میں ہمارے 24 ٹریول ایڈوائزر بھی شامل ہیں۔ جو 24 گھنٹے صارفین کو اپنی خدمات فراہم کررہے ہیں۔ جبکہ ہماری کمپنی اپنے تجربے کی بنیاد پر اس کاروبار کو مزید وسعت دینے کیلئے سرگرم عمل ہے اور جلد ہی ہم اپنے مقرر کردہ اہداف کو حاصل کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ jovago.com جرمنی سے تعلق رکھنے والی کمپنی راکٹ انٹرنیٹ کا ذیلی ادارہ ہے جو دنیا بھر میں سیاحت کے شعبے میں اپنی پیشہ وارانہ خدمت سرانجام دے رہا ہے اور اسی حوالے سے مستند تصور کیا جاتا ہے۔

بزنس پاکستان: پاکستانی سیاحت کے شعبے میں آن لائن مارکیٹنگ کا کیا مستقبل ہے ؟

نادین ملک : پاکستان ٹور ازم ڈیویلپمنٹ کارپوریشن (PTDC) کی رپورٹ کے مطابق سال 2025ء تک پاکستان میں سیاحت کرنے والے افراد کی تعداد دُگنی ہو کر 20 لاکھ ہوجائے گی جو سیاحت کے شعبے کیلئے ایک اچھی خبر ہے۔ یہاں میں ایک بات کا ذکر کرنا ضروری سمجھتی ہوں کہ دستیاب اعداد و شمار کے مطابق 1995ء میں 3 لاکھ 78ہزار مقامی اور غیر ملکی سیاحوں نے سیاحت کی غرض سے پاکستان کا رُخ کیا تھا جبکہ سال 2010ء میں ان کی تعداد بڑھ کر 10 لاکھ سے زائد ہوگئی تھی اس حوالے سے حالیہ اعدادوشمار دستیاب نہیں ہیں تاہم ہماری کمپنی اس حوالے سے اپنے طور پر درست اعدادوشمار اکٹھا کرنے کی بھرپور کوشش کررہی ہے جس سے حقیقی مارکیٹ کااندازہ لگایا جاسکے گا۔ jovago.com کو ابتدائی طور پر سیاحت کے شعبے میں آن لائن مارکیٹنگ کرنے میں انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا اس کی وجہ یہ تھی کہ زیادہ تر افراد آن لائن خدمات سے ناواقف تھے اس کے علاوہ کمپنی کو مقامی ہوٹلز اور گیسٹ ہاؤسز کے بارے میں معلومات حاصل کرنے میں بھی دشواری کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ ان کا کہیں بھی اندراج نہیں تھا۔تاہم PTDC کے دستیاب اعدادوشمار کے مطابق رواں سال 50 ملین مقامی لوگوں نے سیاحت کیلئے پاکستان کے طول و عرض کے سیاحتی مقامات کا رُخ کیا ہے جبکہ گذشتہ کچھ سالوں کے دوران یہ دیکھا گیا ہے کہ لوگوں نے بڑی تعداد میں پاکستان کے سیاحتی مقامات کا رُخ کیا اور اس تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ جو سیاحت کے شعبے کیلئے انتہائی خوش آئند ہے۔

بزنس پاکستان: jovago.com نے پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں اپنی انفرادیت کو کس حد تک برقرار رکھا ہوا ہے ؟

نادین ملک : جب ہم نے پاکستان میں اپنے کام کا آغاز کیا تو اس وقت ہمیں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ اس شعبے میں زیادہ تر کلائنٹ آن لائن مارکیٹنگ سے بالکل ناواقف تھے جبکہ درست معلومات کی عدم دستیابی بھی ہمارے کام میں حائل تھی لیکن ہماری ٹیم نے دن رات کی کوششوں سے ان مسائل کو حل کیا اور ہمارا یہ نظریہ ہے کہ ہم اپنے صارفین کو بالکل درست معلومات فراہم کریں گے اور ایسا ہی ہوا اب ہماری کمپنی کا نام اس شعبے سے وابستہ افراد میں کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے اور ہم نے بھی صارفین کے اعتماد پر پورا اترتے ہوئے ان کو سیاحتی مقامات پر موجود ہوٹلز کے بارے میں درست معلومات فراہم کیں جس سے اُن کا ہمارے ادارے پر اعتماد بڑھا اور آج مقامی اور غیر ملکی سیاحوں کی بڑی تعداد ہماری خدمات کے معترف ہیں اور اس حوالے سے ہم سے ہی رجوع کرتے ہیں۔

بزنس پاکستان: آپ کی کمپنی سے مقامی سطح پر سیاحت کے شعبے میں کام کرنے والے افراد خصوصاً چھوٹے ہوٹلوں اور گیسٹ ہاؤسز کو کوئی فائدہ ہوا ہے ؟

نادین ملک : جی بالکل ہماری کمپنی کی خدمات سے چھوٹے ہوٹلوں نے بھرپور استفادہ کیا ہے اور انہوں نے بھی کچھ عرصے میں بہت ترقی کی ہے۔ ہماری تجاویز کے مطابق مقامی ہوٹلوں اور گیسٹ ہاؤسز نے اپنے معیار کو بہتر بنایا ہے ، جس کی وجہ سے صارفین ان کی خدمات سے مطمئن ہوئے جبکہ ہماری کمپنی نے ان ہوٹلوں اور گیسٹ ہاؤسز کے ذریعے کلائنٹ تک پہنچایا اور اس طرح ایک سلسلہ چل نکلا اب خصوصاً چھوٹے ہوٹل ہماری خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں جس کی وجہ سے ان کے کاروبار نے بھی بہت زیادہ ترقی کی ہے۔

بزنس پاکستان: مقامی سطح پر سیاحت کے فروغ کے حوالے سے آپ کیا کہنا چاہیں گی ؟

نادین ملک : ہمارے ملک میں لاتعداد سیاحتی مقامات ہیں ، خصوصاً شمالی علاقہ جات سب سے زیادہ اہمیت کے حامل ہیں لیکن سڑکوں اور دیگر انفراسٹرکچر کی عدم دستیابی یا غیر معیاری ہونے کی وجہ سے سیاحت کو فروغ دینے میں شدید ترین مشکلات کا سامنا ہے ۔ حکومت کو چاہیے کہ وہ ان علاقوں پر سرمایہ کاری کرکے سڑکوں کی حالت کو بہتر بنایا جائے جبکہ سیاحوں کی ضرورت کے مطابق تمام سہولیات کی دستیابی پر بھرپور توجہ دے اور ان کو عالمی معیار کے مطابق بنائے تاکہ دیگر ممالک سے بھی لوگ سیاحت کے لئے پاکستان کا رُخ کریں۔ یہاں میں ایک اور بات کہناچاہوں گی کہ پاکستان کو سیاحت کے فروغ کیلئے عالمی نمائشوں میں بھی شرکت کرنی چاہیے تاکہ دنیا کو بتایا جاسکے کہ ہمارے ملک میں بہت اچھے سیاحتی مقامات ہیں، اس طرح سیاحت کو مزید فروغ دینا ممکن ہوگا۔

بزنس پاکستان: آپ کے ادارے کے کیا اہداف ہیں جن کو حاصل کرنا ضروری ہے ؟

نادین ملک : ہماری یہ کوشش ہے کہ مقامی سیاحت کے شعبے میں آن لائن بکنگ کروانے والوں کی تعداد میں اضافہ ہو اور دوسرا یہ کہ ہمارے کلائنٹ کو وہی سہولیات میسر آئیں جو ہماری ویب سائٹ میں درج ہیں کیونکہ ایسا بھی ہوتا ہے کہ بعض اوقات ہوٹلوں میں جن سہولیات کا ذکر کیا جاتا ہے، ان کی عدم دستیابی پر صارفین کا اعتماد ختم ہوجاتا ہے اس کے علاوہ تفریحی مقامات کی سیاحت بہت زیادہ ہے۔ لہذا وہاں پر وہ تمام سہولیات دستیاب ہوں جو کلائنٹ کو درکار ہیں اس کے لیے ہم دن رات کو ششیں کررہے ہیں

بزنس پاکستان: آپ کے خیال میں بہتر ٹرانسپورٹ نظام کی سیاحتی شعبے میں کس قدر اہمیت ہے ؟

نادین ملک : جی ہاں بہت زیادہ اہمیت ہے کیونکہ مقامی اور غیر ملکی سیاح ٹرانسپورٹ کے ذریعے ہی ایک مقام سے دوسرے مقام تک پہنچتے ہیں۔ ہمارے ملک میں پبلک ٹرانسپورٹ کا نظام انتہائی خراب ہے جس کی وجہ سے عموماً لوگ اس پر انحصار نہیں کرتے کیونکہ پبلک ٹرانسپورٹ میں عموماً وقت کی پابندی نہیں کی جاتی ہے۔ جبکہ غیر ذمہ دارانہ ڈرائیونگ سے حادثات معمول بن چکے ہیں۔ سیاحوں کی بڑی تعداد جہاز سے سفر کرنے کے اخراجات کی متحمل نہیں ہوتی اس لیے ضرورت اس امر کی ہے کہ پبلک ٹرانسپورٹ کے نظام کو مضبوط اور مؤثر بنایا جائے تاکہ سیاحوں کی زیادہ سے زیادہ تعداد کم اخراجات میں اس سہولت سے استفادہ حاصل کرسکیں۔ پاکستان میں ایونٹس کی بہت زیادہ کمی ہے صرف دو تین شہروں میں ایونٹس یا تہواروں کا اہتمام کیا جاتا ہے جو سیاحوں کو راغب کرنے کیلئے بہت ناکافی ہیں

بزنس پاکستان: آپ کے خیال میں سی پیک اور موٹروے کے نئے منصوبوں سے شعبہ سیاحت پر مثبت اثرات مرتب ہونگے ؟

نادین ملک : جی بالکل موٹر وے اور سی پیک سے پاکستان میں سیاحت کے شعبے کو بہت زیادہ فروغ حاصل ہوگا۔ کیونکہ غیرملکی سیاحوں کی بڑی تعداد سی پیک کو دیکھنے اور اس سے ملحقہ علاقوں کی سیاحت کیلئے یہاں کا رُخ کریں گے ۔ اسکے علاوہ مقامی سطح پر بھی اس شعبے پر موٹر وے اور سی پیک کے اچھے اثرات مرتب ہوں گے۔.

بزنس پاکستان: ای کامرس کو فروغ دینے کے حوالے سے آپ کیا تجویز کریں گی ؟

نادین ملک : ملک میں اس وقت ای کامرس کا رحجان فروغ پارہا ہے اور آن لائن خریداری تیزی سے ترقی کی منازل طے کررہی ہے ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ صارفین کے حقوق کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے ای کامرس کے قوانین کو مزید بہتر بنایا جائے ۔ ہمارا ادارہ اسی حوالے سے حکومت کو تجاویز دیتا رہتا ہے اور اس کے علاوہ ای کامرس کے شعبے کو درپیش مسائل پر بھی گہری نظر رکھی جاتی ہے اور ان کی نشاندہی بھی کی جاتی ہے۔پاکستان میں ای کامرس کے فروغ کیلئے وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کو چاہیے کہ وہ صارفین کے تحفظ کو یقینی بنائے۔

مزید : ایڈیشن 2

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...