بھارت بربریت کے بل پرکشمیرمیں اپنابھرم قائم نہیں رکھ سکتا، ناصر اقبال

بھارت بربریت کے بل پرکشمیرمیں اپنابھرم قائم نہیں رکھ سکتا، ناصر اقبال

لاہور(نمائندہ خصوصی) ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان ،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدورمحمدفاروق چوہان، ندیم اشرف،سلمان پرویز،آصف چٹھہ،تنویرخان،میاں زاہدلطیف،مرکزی نائب صدرمحمداکرم رضوی،صدرمدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدر کراچی یونس میمن، صدرپنجاب محمد یونس ملک ،صدر منڈی بہاؤالدین مرزاخالد محمود،صدر فیصل آبادندیم مصطفی ،صدر ٹیکسلا سردارمنیراختر،،صدر قصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ بھارت بربریت کے بل پرکشمیرمیں اپنابھرم قائم نہیں رکھ سکتا ۔بھارت انسانیت اورعالمی ضمیرکے ساتھ بھونڈامذاق بندکرے۔گرفتارکشمیریوں پر دوران قید بدترین تشدد بند جبکہ انہیں فوری رہاکیا جائے ۔کشمیر میں شیرخواربچے اورگھریلوخواتین بھی بھارتی فسطائیت سے محفوظ نہیں ۔ جموں وکشمیر میں بھارتی فوج کی تعداد بڑھانے سے اس کی معیشت کو مزید نوجھ برداشت کرنا پڑے گا۔بھارتی فوجی دستے کشمیر میں آزادی کارستے بندنہیں کرسکتے ۔جموں وکشمیرروحانی اور فطری طورپرپاکستان کی شہ رگ ہے ،ہم اس سے دستبردار نہیں ہوسکتے ۔بھارتی پابندیوں سے کشمیر میں زندگی پابندسلاسل نہیں ہوگی ۔غیور کشمیریوں کی آزادی کاکارواں رواں دواں رہے گا۔آزادی اورتکمیل پاکستان کیلئے سرگرم کشمیریوں کوتنہا نہیں چھوڑسکتے ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ جموں وکشمیر میں کئی دہائیوں سے انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیاں جاری ہیں مگر اقوام متحدہ نے آج تک کوئی ایکشن نہیں لیا ۔دہلی میں حکمران تبدیل ہوتے رہے مگرکشمیر میں بھارتی بربریت میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے کشمیریوں کوآج تک اپناشہری نہیں سمجھا ،انتہاپسندبھارتی حکمرانوں نے کشمیریوں کوتعصب ،تشدد اورنفرت کے سواکچھ نہیں دیا ۔مقتدرقوتوں کودنیا کوامن وآشتی کاگہوارہ بنانے کیلئے کشمیریوں کی آزادی کیلئے دوٹوک کرداراداکرناہوگا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1