تعلیمی اداروں کو پیف اور دانش اتھارٹی کے حوالے نہ کیا جائے،ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن

تعلیمی اداروں کو پیف اور دانش اتھارٹی کے حوالے نہ کیا جائے،ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ...

لاہور(خبرنگار) ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے مرکزی صدر رشید احمد بھٹی، سیکریٹری جنرل سکندر حیات سسرانا،رانا محمد اسلم انجم ،چوہدری فیاض وڑائچ ، حسن محمود شاہین ،ڈاکٹر صغیر عالم ،چوہدری سکندر ذوالقرنین ،احسان فرید ۔عطائاللہ خان عزیز،سید حیدرعلی کاظمی،محمدجمشید کمبوہ ، جمیل احمد رضوی ، رانا منظو ر،ملک ناصر عباس سمیت دیگر راہنماؤں نے کہا ہے کہ حکومت پنجا ب کے سکولزطلباء کی تعداد میں اضافہ، امتحانی اورغیر نصابی مقابلہ جات کے نتائج،صفائی،سکیورٹی اورڈینگی کے خاتمے جیسے اقدامات کی تکمیل کے بعد ہر لحاظ سے مثالی بن چُکے ہیں مگر ان سکولوں کے مردوخواتین ہیڈز اور اساتذہ کو ڈسپوزل،شوء کازنوٹسز،پیڈا ایکٹ کے تحت کاروائیوں سے خوف و ہراس میں مبتلا کر دیاگیا ہے ۔ ہم وزیر اعظم پاکستان اور وزیر اعلٰی پنجاب سے اپیل کرتے ہیں کہ سکولوں کے مردوخواتین ہیڈز اور اساتذہ کو خوف و حراس میں مبتلا کرنے اور پیڈا ایکٹ کے تحت سزائیں دینے کی بجائے انعامات سے نوازا جائے۔تعلیمی اداروں کو پیف اور دانش اتھارٹی کے حوالے نہ کیا جائے ۔ گریڈنمبر9تاگریڈنمبر20تک کے اساتذہ کی اپ گریڈیشن کی جائے۔

نان سیلری بجٹ حکومت پنجاب کا اہم قدم ہے اس بجٹ میں اضافہ کیا جائے اور اس بجٹ کی رقم ڈائریکٹ ہر سکول کونسل آکاؤنٹ میں بھیجی جائے۔اساتذہ کی تنخواہوں سے ہر ماہ ہزاروں روپے انکم ٹیکس کی کٹوتی ختم کی جائے۔ہاؤس رینٹ،کنوینس اور چارج الاؤنس ڈبل کیا جائے۔ہر سکول میں خاکروب،مالی ،لیبارٹی اٹنڈنٹ ضرور دیا جائے۔تعلیمی فیصلے کرتے وقت اساتذہ نمائندوں سے مشاورت ضرور کی جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4