فاروق ستار ٹریفک حادثے میں شدید زخمی ،ہسپتال منتقل ،حالت خطرے سے باہر

فاروق ستار ٹریفک حادثے میں شدید زخمی ،ہسپتال منتقل ،حالت خطرے سے باہر

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ فاروق ستار ٹریفک حادثے میں شدید زخمی ہو گئے ہیں تاہم ان کی حالت خطرے سے باہر ہے ،فاروق ستار کی گاڑی کو حادثہ سڑک پر پڑی رکاوٹوں کے باعث پیش آیا۔نجی ٹی وی جیونیوز کے مطابق خواجہ اظہار الحسن کا کہناتھا کہ فاروق ستا ر گاڑی کو حادثہ پیش آنے کے باعث وہ شدید زخمی ہو گئے ہیں اور انہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیاہے جہاں ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔فاروق ستار کے ساتھ چار افراد بھی موجود تھے جن میں سے ان کے تین گارڈز شدید زخمی ہیں۔ فاروق ستار حیدرآباد سے کراچی آرہے تھے کہ راستے میں تیزر فتاری کے باعث گاڑی الٹ گئی اور کئی قلابازیاں کھانے کے بعد رکی تو رہنما ؤں کو گاڑی سے باہر نکالا گیا تاہم تمام افراد محفوظ ہیں اور انہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیاہے۔فاروق ستار کے کندھے اور کمر پر چوٹیں آئیں۔ان کی گاڑی کو حادثہ کراچی سے کچھ فاصلے پر علاقے نوری آباد میں پیش جہاں سے کراچی کا راستہ تقریبا 45منٹ کاہے۔خواجہ اظہار الحسن کا کہناتھا کہ ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ کو کندھے اور کمر پر چوٹ آئی ہے جس کے باعث وہ شدید تکلیف میں مبتلا ہیں۔فاروق ستار کی گاڑی کو حادثہ سڑک کے بیچ وبیچ پڑی رکاوٹوں کے باعث پیش آیا ،تیز رفتاری میں ڈرائیور نے گاڑی کو اچانک سامنے ہائی وے پر پڑے بیریئرز سے بچانے کی کوشش کی تو گاڑی الٹ گئی۔حادثے میں گاڑی پوری طرح سے تباہ ہو گئی ہے۔قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے فاروق ستار کی گاڑی کو حادثہ پیش آنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے فاروق ستار کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ہیایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ اللہ کا شکر ہے معجزانہ طور پر بچ گیا ہوں۔ میری گاڑی نے کچے میں اترنے کے بعد پانچ قلابازیاں کھائیں۔کار حادثے میں زخمی ہونے کے بعد اپنے ساتھیوں سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ میرے کندھے اور پاوں پر شدید چوٹیں آئی ہیں۔ کارکن پرامن رہیں۔ واضح رہے کہ حیدر آباد میں تنظیمی دورے کے بعد کراچی واپسی پر نوری آباد کے مقام پر فاروق ستار کی گاڑی کو حادثہ پیش آیا تھا جس میں فاروق ستار سمیت چار افراد شدید زخمی ہوگئے تھے۔ ان کے ایک گارڈ کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق فاروق ستار کو عباسی شہید ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ اول