دہشتگردی حرام ہے ،امت مسلمہ اپنے اندر سے فرقہ واریت ختم کرے :امام کعبہ

دہشتگردی حرام ہے ،امت مسلمہ اپنے اندر سے فرقہ واریت ختم کرے :امام کعبہ

مکہ مکرمہ (اسد اکرم) امام کعبہ شیخ عبدالرحمن السدیس نے خطبہ حج دیتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی حرام ہے۔ دہشت گردی کا اسلام اور امت مسلمہ سے کوئی تعلق نہیں،دنیا کو اس وقت مختلف شکلوں میں دہشت گردی کے فتنے کا سامنا ہے ،ایسے حالات میں حکمرانوں اور مسلمانوں پر کفر کا بہتان لگانے والا فتنہ پرور ٹولہ ہے۔ان کا کہنا ہے کہ فرقہ واریت کو جڑ سے ختم کرنا چاہیے،امت مسلمہ اپنے اندر سے فرقہ واریت کو ختم کر کے اتحاد پیدا کرے ،اتحاد امت اور تدبر سے ان تمام مسائل کو حل کرنے کی ضرورت ہے۔دہشت گرد امت مسلمہ کو کمزور کرنے کی کوشش کررہے ہیں،دہشت گردوں نے نوجوانوں کو ورغلا کر قتل اور فساد کی راہ پر ڈال دیا‘ زمین پر فساد پھیلانے والوں کو ان کے انجام تک پہنچایا جائے‘ امت مسلمہ دوسروں کی طرف دیکھنے کی بجائے متحد ہو کر مسائل کا حل تلاش کرے۔اسلامی حکمران عوام کے ساتھ انصاف ‘ انصاف ‘ انصاف کریں‘ اسلام کی بنیاد عدل پر قائم ہے‘ شام ‘ یمن اور فلسطین کے حالات خراب ہیں امت مسلمہ مشکل دور سے گزر رہی ہے‘ نوجوانان اسلام فتنے‘ شدت پسندی اور دہشت گرد گروہوں کے خلاف سینہ سپر ہوجائیں‘ اسلامی میڈیا اسلام کی اصل تعلیمات پیش اور حقائق پر مبنی معلومات فراہم کریں‘ فتنہ اور معاشروں میں تقسیم کرنے والا مواد نشر نہ کریں‘ علماء انبیاء کے وارثین ہیں‘ تمام عالم اسلام کے علماء کی ذمہ داری ہے کہ وہ تشدد سے روکیں‘قوموں کو صراط مستقیم پر چلانے کے لئے علماء کرام کردار ادا کریں‘ مسلمانوں آپس میں بحث اور مکالمہ بھی اچھے انداز میں کرو اور اﷲ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو‘ حج سیاسی اجتماع نہیں ‘ سیاسی نعرے مت لگاؤ‘ حج کو سیاسی مقاصد کے لئے ہرگز استعمال نہ کیا جائے‘ والدین کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آیا جائے‘ امن و امان کو قائم رکھنا مسلمانوں کی بنیادی ذمہ داری ہے‘ اسلام کا صحیح اور واضح پیغام دنیا میں عام کرنا ہوگا‘ اسلام کی تمام تعلیمات انصاف اور عدل پر مبنی ہیں ان تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر ہی دنیا و آخرت میں کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے‘ کسی گورے کو کالے پر کوئی فضیلت حاصل نہیں اﷲ کے ہاں فضیلت صرف تقویٰ کی بنیاد پر ہے۔ وہ گزشتہ روز خطبہ حج دے رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ کا تقویٰ اور اطاعت اختیار کرو‘ اﷲ نے انسان کو اشرف المخلوقات بنا کر بھیجا۔ اے ایمان والو سیدھی اور سچی بات کرو‘ اسلام وہ مذہب ہے جس نے لوگوں کو روشن کردیا اسلام لوگوں کو اﷲ کی بغاوت اور شرک سے منع کرنے کی دعوت دیتا ہے۔ تمام انسان و جن اﷲ تعالیٰ کی عبادت کریں یہی بنیادی پیغام ہے۔ اﷲ کی اطاعت اور عبادت کے پیغام کے لئے ہی انبئاء علیہم السلام کو بھیجا محمد صلی اﷲ علیہ وسلم نے خطبہ حجۃ الوداع میں اسلام کا واضح پیغام پیش کیا خطبہ حجۃ الوداع میں بنیادی انسانی حقوق بیان کئے گئے حضور صلی اﷲ علیہ وسلم نے اپنے خطبے میں خواتین کے بنیادی حقوق بھی بیان کئے۔ حضور صلی اﷲ علیہ وسلم نے واضح کیا کہ کسی گورے کو کالے پر کوئی فضیلت حاصل نہیں ہے اﷲ کے ہاں فضیلت صرف تقویٰ کی بنیاد پر ہے۔ شیخ عبدالرحمن السدید نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ زمین پر عدل و انصاف کا نظام چاہتا ہے تمام مسلمان ایک جسم کی طرح ہیں۔ مسلمانوں کو چاہئے کہ نیکی پر جمع ہوں اور برائی کو روکیں۔ قرآن واضح کرتا ہے کہ ہم نے تم کو مختلف رنگ و نسل میں پیدا یا انسان انسان پر واجب ہے کہ اﷲ کی عبادت کرے اور والدین سے حسن سلوک کرے۔ حضور صلی اﷲ علیہ وسلم نے اپنی تعلیمات میں پڑوسیوں سے بھی حسن سلوک کا حکم دیا۔ قرآن واضح کرتا ہے کہ ایک انسان کو بچانا ایسا ہے جیسے پوری انسانیت کو بچایا۔ سب سے زیادہ حقوق قریبی رشتہ داروں کے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری امت آج مشکل مرحلے سے گزر رہی ہے۔ امت مسلمہ کو چاہئے کہ وہ اتحاد و یکجہتی کا مظاہرہ کرے۔ فلسطین اور شام امت مسلمہ کیلئے اہمیت کے حامل ہیں امت مسلمہ متحد ہو کر ہی تمام مسائل کا سامنا کرسکتی ہے۔ امت مسلمہ جذبہ اخوت کو مضبوط بنائے اسلام کی تمام تعلیمات انصاف اور عدل پر مبنی ہیں۔ اسلام کی تمام تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر ہی کامیابی حاصل کی جاسکتی ہے۔ اے مسلمانوں لوگوں کو برائی سے روکو اور نیکی کی دعوت دو۔ اسلام انصاف‘ مساوات کا درس دیتاہے۔ اسلام امن ‘ سلامتی اور محبت کا دین ہے دین اسلام کو تمام مذاہب پر برتری حاصل ہے اﷲ تعالیٰ نے محمد صلی اﷲ علیہ وسلم کو تمام جہانوں کے لئے رحمت بنا کر بھیجا۔ امام کعبہ نے کہا کہ آج ہمیں مختلف شکلوں میں دہشت گردی کا سامنا ہے دہشت گردی کا اسلام اور امت مسلمہ سے کوئی تعلق نہیں نوجوانوں کو سیدھے راستے سے ہٹا کر فتنہ اور فساد کی طرف راغب کیا گیا۔ اے مسلمان نوجوانوں امت مسلمہ کی وحدت کے لئے کام کرو۔ دنیا کو بتانا ہے کہ اسلام اخلاق عالیہ کا دین ہے ‘ دین اسلام کی بلندی اور پیغام پوری دنیا میں عام کرنا ہوگا۔ حضور صلی اﷲ علیہ وسلم اخلاق کے اعلیٰ ترین درجے پر فائز تھے۔ اعلیٰ اخلاق کی بدولت ہی محمد صلی اﷲ علیہ وسلم نے انسانیت کو دعوت دی اخلاقیات ختم ہونے سے آج بہت سے معاشرے تنزلی کا شکار ہیں اﷲ تعالیٰ نے انسان کو اچھے اور برے دونوں راستے بتا دیئے ہیں۔ علماء کرام انبیاء کے وارثین ہیں ان کو چاہئے امت میں تفرقہ نہ ڈالیں۔ علمائے دین کو چاہئے کہ لوگوں کے ساتھ نرمی کے ساتھ پیش آئیں اسلام کا صحیح اور واضح پیغام دنیا میں عام کرنا ہوگا۔ یہ نرمی کا دین ہے انسانیت کی بھلائی کے لئے مسلمانوں کو لوگوں کا فائدہ سامنے رکھنا ہوگا۔ میڈیا کے لوگ اسلام کا بنیادی اور واضح پیغام دنیا تک پہنچائے آج حجاج کرام ‘ آج آپ سب مقدس جگہ پر موجود ہیں اﷲ تعالیٰ نے اس زمین کو جو خصوصیات دیں کسی اور جگہ کو حاصل نہیں حضرت ابراہیم علیہ السلام نے اس زمین کے لئے امن اور سلامتی کی دعا کی۔ انہوں نے کہا کہ انسان اﷲ تعالیٰ کی عطا کردہ بے شمار نعمتوں کا شکر ادا کرے امن و امان کو قائم رکھنا مسلمانوں کی بنیادی ذمہ داری ہے۔ سعودی حکومت حجاج کے لئے ہر قسم کے بہترین انتظامات کرتی ہے سعودی حکومت حجاج کے لئے ہر قسم کی سہولتیں فراہم کرنے کی پوری کوشش کرتی ہے دعوت اور تبلیغ کا کام کرنیوالے مسلمانوں کا شکر گزار ہوں۔ اﷲ تعالیٰ یوم عرفہ کے دن بہت سے مسلمانوں کی مغفرت کرتا ہے سب سے بہترین دعا وہ ہے جو یوم عرفہ کی جائے اے حجاج مغرب تک آپ نے یہاں وقوف کرنا ہے اس کے بعد آپ نے مزدلفہ کی طرف روانہ ہونا ہے ‘ اے مسلمانو مایوسی سے بچو اور ہمت سے کام لو اﷲ کا امر و حکم ہی زمین پہ غالب آتا ہے۔ لیکن اگر لوگ یہ نہیں جانتے انہوں نے کہا کہ اے مسلمانوں حضور صلی اﷲ علیہ وسلم پر درود و سلام بھیجو۔ اﷲ خود اور فرشتے بھی حضور صلی اﷲ علیہ وسلم پر درود بھیجتے ہیں اے اﷲ مسلمانوں کو عزت اور ہمت عطا فرما‘ اے اﷲ مسلمانوں کو نیکی کی توفیق دے اور سیدھا راستہ عطا فرما‘ اے اﷲ مسلمانوں کے دلوں کو اپنی اطاعت اور تقویٰ پر متحد کر دے‘ اے اﷲ پوری دنیا میں امن و سلامتی فرما‘ اﷲ تعالیٰ حجاج کی خدمت کرنے کا ثواب شاہ سلمان کو عطا فرما۔ اے اﷲ حرمین کیخلاف سازش کرنے والوں کا منصوبہ ناکام بنا مقدس مقامات میں فساد پھیلانے والے ہرگز کامیاب نہیں ہوں گے۔ اے اﷲ ہماری کاوشیں قبول فرما بے شک تو ہی رحم کرنے والا ہے اے اﷲ مسلمانوں کے حالات بہتر فرما۔ اے اﷲ فلسطین‘ شام اور دیگر ممالک کے مسلمانوں کی مدد فرما اے اﷲ ہمیں دنیا اور آخرت میں بہترین نعمتوں سے مالا مال فرما۔ انہوں نے کہا کہ اﷲ تعالیٰ نے حرمین شریفین اور مقدس مقامات کی حفاظت کا ذمہ لیا ہے اﷲ حدود حرم کی حفاظت فرمائے۔ دہشت گرد امت مسلمہ کو کمزور کرنے کی کوشش کررہے ہیں دہشت گردوں نے نوجوانوں کو ورغلا کر قتل و فساد کی راہ پر ڈال دیا ‘ زمین پر فساد پھیلانے والوں کو ان کے انجام تک پہنچایاجائے۔ امت مسلمہ دوسروں کی طرف دیکھنے کی بجائے متحد ہو کر مسائل کا حل تلاش کرے۔ دہشت گردی کو کسی بھی قوم یا دین سے نہیں جوڑا جاسکتا دہشت گرد دھماکوں کے ذریعے امت مسلمہ کو کمزور کرنے کی کوشش کررہے ہیں حکمرانوں اور مسلمانوں پر کفر کا بہتان لگانے والا فتنہ پرور ٹولہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی ملکوں کے سربراہان عوام کے ساتھ عدل و انصاف کے ساتھ پیش آئیں۔ ژ فرقہ واریت کو جڑ سے ختم کرنا چاہئے اسلامی میڈیا و اسلام کی اصل تعلیمات پیش اور حقائق پر مبنی معلومات فراہم کرے۔ میڈیا فتنہ اورمعاشروں میں تقسیم کرنے والا مواد نشر نہ کرے تمام عالم اسلام کے علماء کی ذمہ داری ہے کہ تشدد سے روکیں مسلمان علم‘ رواداری اور اچھا سلوک اپنا کر بہترین نمونہ بنیں۔ مسلمان نوجوانو گمراہ کن گروہوں کے سامنے سینہ سپر ہوجاؤ اﷲ کی کتاب اور سنت رسول کو تھامنے والا گمراہ نہیں ہوگا۔ وہ کامیاب ہوگیا جس نے اپنا نفس پاک کرلیا ۔ اپنی قوموں کو صراط مستقیم پر چلانے کے لئے علماء کرام کردار ادا کریں آج کا سب سے اہم پیغام علمائے کرام سے ہے ‘ اے حجاج کرام گھر لوٹ کر بھی تقویٰ اختیار کرنا اﷲ تعالیٰ مسلمانوں کی قیادت کو ہدایت دے۔ ہمیں باطل کا نہیں سچے لوگوں کا ساتھ دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانو بحث اور مکالمہ بھی اچھے انداز میں کرو اے مسلمانو گروہ بندی سے بچو اﷲ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو اسلامی میڈیا دفاع اسلام کا جھنڈا اٹھائے چیلنجز سے نمٹنے کے لئے امت مسلمہ کو متحد ہونا ہوگا۔ حج سیاسی اجتماع نہیں سیاسی نعرے مت لگاؤ حج کو سیاسی مقاصد کے لئے ہرگز استعمال نہ کرو اسلام حسن اخلاق سے پھیلا تلوار سے نہیں۔ امت مسلمہ جذبہ اخوت کو مضبوط بنائے اے اﷲ مسجد اقصیٰ کو یہودیوں سے نجات دلا دیں اے اﷲ جہاں مسلمان پریشان ہیں مدد فرما دیں اے اﷲ تمام مسلمانوں کی مغفرت فرما۔ انہوں نے کہا کہ والدین کے ساتھ حسن سلوک کے ساتھ پیش آیا جائے زمین پر فتنے اور فساد سے منع کیا گیا ہے مسلمان ایک جسم کی مانند ہیں آپس میں اتفاق کی صرورت ہے۔

مزید : صفحہ اول