تحریک حریت کا مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ نوجوانوں کی گرفتاریوں پر اظہار مذمت

تحریک حریت کا مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ نوجوانوں کی گرفتاریوں پر اظہار مذمت

سری نگر ( اے این این )تحریک حریت نے تنظیم کے جنرل سیکریٹری محمد اشرف صحرائی، شبیر احمد شاہ، نعیم احمد خان، مسرت عالم بٹ، آغا سید حسن، پیر سیف اللہ، ایاز اکبر، الطاف احمد شاہ، راجہ معراج الدین، امیرِ حمزہ شاہ، محمد یوسف لون، محمد اشرف لایا، بلال صدیقی، حکیم عبدالرشید، مفتی عبدالاحد، سید امتیاز حیدر، محمد امین پرے، عبدالمجید پرے، نذیر احمد مانتو، شکیل احمد بٹ، ڈاکٹر غلام محمد گنائی، مدثر ندوی کے علاوہ دوسرے سینکڑوں نوجوانوں کو گرفتار اور نظربند کرنے کی مذمت کی ہے۔

بیان میں کہاگیا کہ بھارتی فورسز اور پولیس نے ریاست کو بڑے جیل میں تبدیل کردیا ہے اور جموں کشمیر کے عوام کے لیے سرزمین کشمیر میدان کربلا اور ہر آنے والا دن یومِ عاشورہ کی عملی تصویر پیش کررہی ہے۔ بیان میں کہاگیاکہ پولیس نے پرامن سیاسی جدوجہد کو طاقت کے بل بوتے پر کچلنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی ہے۔ جموں کشمیر کے عوام اس وقت سرکاری طورپر ظلم وجبراور مار دھاڑ کے دور سے گزررہے ہیں۔ تحریک حریت نے کہا جموں کشمیر کی متنازعہ حیثیت عوامی خواہشات اور قربانیوں کے تناظر میں حل کرنے میں بھارت نے کبھی بھی دلچسپی نہیں دکھائی، بلکہ طاقت کے نشے میں بھارت نے ہمیشہ طاقت کا بے تحاشا استعمال کرکے آزادی کی آوازوں کو دبایا۔

مزید : عالمی منظر