نا اہلی ریفرنسر پر سپیکر کی رولنگ پر بات نہیں کر سکتا، آئین پر سختی سے عمل ہوگا تو جمہوریت مستحکم ہوگی چئیرمین سینیٹ

نا اہلی ریفرنسر پر سپیکر کی رولنگ پر بات نہیں کر سکتا، آئین پر سختی سے عمل ...

کراچی(اے این این) چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے پانامہ لیکس سے متعلق نا اہلی ریفرنسز پر سپیکر قومی اسمبلی کی رولنگ پر تبصرے سے گریز کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئین پر سختی سے عمل ہوگا تو جمہوریت مستحکم ہو گی، قائد اعظم نے پاکستان ترقی پسند، جمہوری اور پارلیمانی ملک بنانے کیلیے تشکیل دیا تھا،مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال افسوسناک،پیلٹ گنوں سے سینکڑوں نوجوان اور بچے بینائی کھو بیٹھے،عالمی برادری بڑی باتیں کرتی ہے،بھارتی مظالم کا نوٹس کیوں نہیں لیتی،پاکستان بھارت پر سفارتی دباؤ بڑھائے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے مزار قائد پر حاضری کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔رضاربانی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں چھرا بندوقوں سے سیکڑوں نوجوان اور بچے اپنی بینائی کھو بیٹھے ہیں جو کہ قابل مذمت عمل ہے۔ انسانی حقوق کی بڑی بڑی باتیں کرنے والی عالمی برادری کو کشمیر میں بھارتی میں مظالم کا نوٹس لینا چاہیے اور پاکستان کو بھارت کے خلاف سفارتی دبا ؤ استعمال کرنا چاہیے۔قائم مقام صدر نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا سلسلہ بند کرانے کیلئے اقدامات کرے۔رضا ربانی نے مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں کے خلاف بھارتی فوج کی بربریت کی مذمت کی۔ انہوں نے کہاکہ پرامن مظاہرین کے خلاف بھارتی فوج کی طرف سے چھرے والی بندوق کے استعمال سے کئی نوجوان شدید زخمی ہوئے ہیں ،سینکڑوں نوجوان اور بچے پیلٹ گنوں کے چھرے لگنے سے بینائی سے محروم ہو چکے ہیں ۔رضا ربانی نے کہا کہ قائد اعظم نے پاکستان ترقی پسند، جمہوری اور پارلیمانی ملک بنانے کیلیے تشکیل دیا جب کہ آئین پر سختی سے عمل درآمد سے ہی جمہوریت مستحکم ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ وزیر اعظم کی نااہلی سے متعلق ریفرنس پر اسپیکر کی رولنگ پر تبصرہ نہیں کرسکتے کیونکہ سردار ایاز صادق اسپیکر ہیں۔رضا ربانی نے مزار قائد پر حاضری دی پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی ۔

چیئرمین سینیٹ

مزید : پشاورصفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...