تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بوریوالا میں موک ایکسر سائز،بم کی اطلاع پر مریضوں کی دوڑیں

تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بوریوالا میں موک ایکسر سائز،بم کی اطلاع پر مریضوں کی ...

بورے والہ ( نمائندہ پاکستان ،تحصیل رپورٹر) پولیس،سول ڈیفنس،بم ڈسپوزل،ریسکیو اور دیگر اداروں کی کارکردگی چیک کرنے کے لیے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں بم کی اطلاع پر موک ایکسر سائز ،وارڈوں میں داخل مریضوں کی دوڑیں لگ گئیں، مریضوں میں افراتفری ،ہسپتال میں شدید خوف و ہراس،تفصیلات کے مطابق ضلعی و تحصیل پولیس انتظامیہ کی جانب سے پولیس،بم ڈسپوزل سکواڈ،سول ڈیفنس،ریسکیو1122،ٹی ایم اے اور دیگر اداروں کی کارکردگی چیک کرنے کے (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

لیے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال بورے والا میں موک ایکسر سائز کی خاطر ہسپتال میں بم کی موجودگی کی اطلاع دے دی جبکہ پولیس انتظامیہ نے اس موک ایکسر سائز سے قبل ہسپتال میں زیر علاج مریضوں اور اُنکے لواحقین کو بھی کوئی اطلاع نہ دی جب بم کی اطلاع ملنے پر مختلف محکموں کی گاڑیاں اور اہلکار ہسپتال پہنچے تو ہسپتال میں زیر علاج مریضوں اور اُنکے لواحقین میں بھگڈر مچ گئی۔ اور ہسپتال کا عملہ بھی خوفزدہ ہوگیا لیکن تھوڑی دیر بعد جب موک ایکسر سائز ختم ہوئی اور اسکا علم ہونے پر مریضوں،اُنکے لواحقین اور ہسپتال عملہ کی جان میں جان آئی مریضوں کے لواحقین کا کہنا تھا کہ پولیس انتظامیہ نے موک ایکسر سائز کے لیے مبینہ طور پر نا مناسب جگہ کا انتخاب کیا اور اس ایکسر سائزسے قبل مریضوں کو اطلاع تک نہ دی گئی ۔دریں اثناء ڈی ایس پی بورے والا مہر ذوالفقارعلی سندرانہ اوراسسٹنٹ کمشنر احمرسہیل کیفی نے ہسپتال میں موجود سرکاری محکموں اورپولیس اہلکاروں کے علاوہ ہسپتال کے عملہ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اس ریہرسل میں خاصی کوتاہیاں دیکھنے میں آئی ہیں جن کو دور کیاجاناضروری ہے بم کی اطلاع سے ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کو اچانک ایسی اطلاع ان کے لئے جان لیوا بھی ہوسکتی ہے یہاں اداروں کی بروقت رسائی کے لئے ان کی ٹریننگ ضروری ہے اورایسے اہلکاروں کی شناخت اور وردیاں بھی ضروری ہیں انشااللہ عیدالاضحی کے بعد اسے باقاعدہ طورپرمنظم طریقے سے کیاجائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر