مقابلے میں مارے جانیوالے5ڈاکو پولیس کو انتہائی مطلوب تھے،ڈاکٹر رضوان

مقابلے میں مارے جانیوالے5ڈاکو پولیس کو انتہائی مطلوب تھے،ڈاکٹر رضوان

ملتان(کرائم رپورٹر)ْقائم مقام سی پی او ملتان ڈاکٹر رضوان نے کہا ہے کہ پولیس مقابلے میں مارے جانے والے 5ڈاکو پولیس انتہائی مطلوب تھے ،کچھ روز قبل شاہ شمس کے علاقہ میں میزان بنک ڈکیتی سمیت دیگر اضلاع میں 18 بنک لوٹے جبکہ سینکڑوں راہ زنی کی وارداتوں میں مختلف اضلاع کی پولیس کو مطلوب تھے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پولیس لائن میں پریس کانفرنس (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ان کے ساتھ ایس پی سیف اللہ خٹک اور ڈی ایس پی نصر اللہ وڑائچ بھی موجود تھے۔ کا کہنا تھا کہ ملزموں کی شناخت اللہ دینو عرف راجہ ،ذولفقار علی عرف سنجے ،نوید عرف وقاص ،سجاد عرف غلام رسول اور جمال الدین عرف نذیر ہیں،جن کا تعلق سندھ کے مختلف علاقوں سے ہے تاہم انکا کسی تنظیم سے کوئی تعلق نہ ہے،ملتان میں موجود ان کے سہولت کاروں کی نشاندہی بھی ہو چکی ہے ،جن کے خلاف جلد ہی بھرپور کاروائی کی جائے گی، ان کا مزید کہنا تھا کہ اس کیس کے ملزموں کو ٹریس کرنے کا کریڈت سابق سی پی او ملتان اظہر اکرم کو جاتا ہے جنھوں نے ایس پی کینٹ ڈی ایس پی سی آئی اے نصر اللہ وڑائچ، شوکت کمانڈو اور رمضان کی سر ہے ۔جو کاریں استعمال ہوئیں ان کے اصل نمبر اور مالکان کا پتا چل گیا ہے۔کیس کے دیگر ملزمان کو پراسیکیوشن کے ذریعے سزائیں دلوائیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں سی پی او ملتان کا کہنا تھا کہ ملتان میں200تنظیموں کو کھالیں جمع کرنے کی اجازت ہے جس کا لیٹر ڈی سی او کی جانب سے آچکا ہے،جبکہ کسی بھی تنظیم کو گھر گھر جاکر کھالیں جمع کرنے کی اجازت ہر گز نہ ہوگی ایسے عناصر کے خلاف کاروائی کی جائے گی،چائینیز سیکورٹی کے حوالے سے کیے گئے سوال کے جواب میں قائم مقام سی پی او ملتان ڈاکٹر رضوان کا کہنا تھا کہ انہیں بھرپور سیکورٹی دی گئی ہے چائینیز ہمارے مہمان ہیں اور دیگر شہریوں کی طرح ان کی حفاظت بھی ہماری اولین ذمہ داری ہے۔ سابق سی پی او ملتان اظہر اکرم نے اس حوالے کھلے دل سے اپنی ذمہ داری تسلیم کی چائینیز انجینئیرز کے ساتھ بدسلوکی کرنے والے افسران کے خلاف کاروائی کی جاری ہے۔

ڈاکٹر رضوان

مزید : ملتان صفحہ آخر