امام کعبہ نے 12سال کی عمر میں قرآن حفظ کیا،شریعہ میں پی ایچ ڈی اور کئی کتابوں کے مصنف ہیں:رپورٹ

امام کعبہ نے 12سال کی عمر میں قرآن حفظ کیا،شریعہ میں پی ایچ ڈی اور کئی کتابوں ...
امام کعبہ نے 12سال کی عمر میں قرآن حفظ کیا،شریعہ میں پی ایچ ڈی اور کئی کتابوں کے مصنف ہیں:رپورٹ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

جدہ ( ویب ڈیسک) گزشتہ روز خطبہ حج دینے والے امام کعبہ شیخ عبدالرحمن بن عبدالعزیز بن عبداللہ بن محمد السدیس سعودی عرب کے صوبہ قصیم کے ایک قصبہ البکیری میں 1382ھ یعنی 1962ءکو پیدا ہوئے۔12 سال کی عمر میں آپ نے قرآن مجید حفظ کیا۔ 1979ءمیں ریاض کے المعھد العلمی سے فرسٹ ڈویژن میں ثانویہ کی ڈگری لی، 1983ءمیں شریعہ میں بیچلر کیا اور پھر محمد بن سعود اسلامک یونیورسٹی سے 1987ءمیں اصول فقہ میں ماسٹرز کیا۔ 1995ءمیں ام القریٰ یونیورسٹی سے شریعہ میں پی ایچ ڈی کیا۔شیخ صاحب کئی کتابوں کے مصنف ہیں۔

اکثر کتب ”اصلاح امت “ کے موضوعات پر ہیں، جبکہ اصول فقہ کے موضوعات پر بھی کئی کتابیں لکھیں۔ آپ کے خطبات پر مشتمل کتابوں کے اردو ترجمے بھی ہو چکے ہیں۔ 1995ءمیں دبئی سے قراءکے مقابلے میں ”ممتاز اسلامی شخصیت“ کا ایوارڈ حاصل کیا۔ 22شعبان 1404ھ یعنی 8 اکتوبر 1983ءکو آپ کعبہ کے امام اور خطیب کے منصب پر فائز ہوئے۔ کعبہ میں پہلی نماز، عصر کی پڑھائی۔15 رمضان کو حرم میں اپنا پہلا خطبہ جمعہ دیا۔ 17 جمادی الثانی 1433ھ منگل کو شیخ السدیس کو امور حرمین کا وزیر متعین کرنے کا شاہی فرمان جاری ہوا۔

آپ مختلف ممالک کا تبلیغی دورہ بھی کرچکے ہیں۔ پاکستان آئے تو لوگ جوق در جوق آپ کی ایک جھلک دیکھنے کیلئے ٹوٹ پڑے۔

مزید : عرب دنیا