نیا لباس کتنا ہی صاف کیوں نہ ہو اسے دھو کر پہنیں

نیا لباس کتنا ہی صاف کیوں نہ ہو اسے دھو کر پہنیں

آپ نے بہت سی بوتیک اور دُکانوں کیrankپر ریڈی میڈلباس دیکھے ہوں گے۔جو دیکھنے میں تو بہت خوبصورت اور جاذب نظر لگتے ہیں، ان کی چمک دھمک آپ کی آنکھوں کو خیرہ کرتی ہے لیکن بظاہر یہ خوبصورت نظر آنے والے لباس بیماریوں کا مجموعہ ہوتے ہیں،ان کے پہنے سے بہت سی بیماریاںآپ کو لگ سکتی ہیں ۔کیا آپ اپنے برانڈڈ کپڑوں کو پہلی دفعہ پہنے سے پہلے دھو کر استعمال کرتے ہیں یا نہیں؟بعض اوقات آپ اپنے جسم پر لال دھبے،اور الرجی محسوس کرتے ہیں لیکن آپ کو پتا ہی نہیں ہوتا کہ ان بیماریاں کی وجہ کیا ہے۔

آئیے ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ ریڈی میٹ کپڑے کیسے آپ کو بیمار کرسکتے ہیں۔ کولمبیا یونیورسٹی میڈیکل سینٹر میں ڈر میٹا لوجی کے ایک پروفیسرDonald Belsito کے مطابق،یہ صاف نظرآنے والے کپڑ ے بالکل صاف نہیں ہوتے،کپڑوں کے رنگ Dyes اور Formaldehydeآپ کے جسم پرجلن کرتے ہوگئے۔اور یہ الرجیک کی صورت میں ردعمل ہو سکتے ہیں لیکن ہم لوگ ان خطرات سے دور ہیں۔

کچھ ایسی بیماریاں بھی ہوتی ہیں جو لباس کے ذریعے ہم میں منتقل ہو سکتی ہے۔ڈریسنگ روم ان میں سے ایک جگہ ہے جہاں ایک لباس کو چیک کرنے کے لئے کئی لوگ استعمال کرتے ہیں۔آپ کو اس بات کا بھی اندازہ نہیں ہو گا کہ اس لباس کو استعمال سے پہلے اس کو کتنے لوگوں نے چھولیا ہے۔اُن لوگوں نے جنہوں نے یہ لباس تیار کیا ہے ،جنہوں نے اس کو بھیجا،اور اُن لوگوں نے جنہوں نے ان کو ranksمیں لگایا ہے۔

اس لیے ہم لوگوں کو چاہیے کہ اپنے نئے لباس کو بے شک وہ برانڈڈہو یا عام لباس، ان کو استعمال سے پہلے دھو لینا چاہیے۔ ماہرینِ صحت کا بھی کہنا ہے کہ ان کو ایک بار نہیں دو بار دھو لینا چاہیے حفظان صحت کی شرائط میں ایسا کرنا بہت اچھا کام ہے۔اور وہ لوگ جن کی جلد بہت احساس ہوتی ہے ایسے لوگوں کے لیے تو یہ اور بھی ضروری ہے کہ وہ ہر نئے لباس کو پہلی دفعہ استعمال سے پہلے ضرور دھولیں۔میں خود بھی اپنے نئے کپڑوں کو پہلی دفعہ استعمال کرنے سے پہلے ضرور دھو لیتی ہوں۔

نئے کپڑوں کو دھونے کا طریقہ:

نئے کپڑوں کو دھونے کا طریقہ یہ ہے کہ ان کو نارمل پانی میں تھوڑا سا واشنگ پاؤڈر ڈال کر ہاتھ کی مدد سے دھو لیں، رنگ دار کپڑوں کو الگ دھوئیں۔ انہیں spinنہ کریں ان کو کھلی ہوا میں خشک ہونے دہیں۔نئے اور رنگ دار کپڑوں کو بلیچ نہ دیں۔

مزید : ایڈیشن 1