پنجاب میں پرائیویٹ سکولوں کی فیسوں میں سالانہ اضافہ بارے قانون وضع

پنجاب میں پرائیویٹ سکولوں کی فیسوں میں سالانہ اضافہ بارے قانون وضع

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)صوبائی محکمہ سکولز ایجوکیشن کے ترجمان نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے پرائیویٹ سکولوں کی فیسوں میں سالانہ اضافہ کے حوالے سے جامع قانون وضع کیا ہے۔اس قانون کے تحت فیسوں میں مقررہ حد سے زائد سالانہ اضافہ کے مرتکب نجی سکولوں کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی تا کہ والدین کسی معاشی بوجھ کا شکار نہ ہوں۔آج یہاں جاری ایک بیان میں محکمہ سکولز ایجوکیشن کے ترجمان نے کہا ہے کہ ناجائز طور پرفیس وصولی کی صورت میں والدین متعلقہ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر، ایڈمنسٹریٹر یا ڈپٹی کمشنر کے پاس درخواست دے سکتے ہیں اور وصول کردہ اٖضافی رقوم والدین کو واپس دلائی جائیں گی۔

ترجمان نے واضح کیا کہ نجی سکولوں کی فیسوں میں سالانہ اضافہ کا طریق کار متعین کر دیا گیا ہے ۔اس قانون کے تحت 4ہزار روپے ماہوار یا اس سے زائد فیس وصول کرنے والے پرائیویٹ سکولز صرف5فیصد تک سالانہ اضافہ کرنے کے مجاز ہیں، تا ہم اگرسکول انچارچ کے پاس5فیصد سے زائد اضافہ کیلئے معقول جواز موجود ہو تو وہ تعلیمی سال کے آغاز سے 60دن قبل ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کو درخواست دے سکتا ہے جس پر رجسٹرنگ اتھارٹی مزید3فیصد تک اضافہ کی منظوری دے سکتی ہے۔

سکولز ؍فیسیں

مزید : علاقائی