ہالی ووڈ فلم ’’اے اسٹار از بارن‘‘ 12 اکتوبر کو سینما گھروں کی زینت بنے گی

ہالی ووڈ فلم ’’اے اسٹار از بارن‘‘ 12 اکتوبر کو سینما گھروں کی زینت بنے گی

ٹورنٹو (این این آئی) لیڈی گاگا کی پہلی ہولی وڈ فلم’ ’اے اسٹار از بارن‘‘ کا ٹورنٹو فلم فیسٹیول میں شاندار پریمیئر ہوا۔جہاں اس فلم سے لیڈی گاگا ڈیبیو کرنے جا رہی ہیں، وہیں فلم ساز بریڈلی کوپر بھی اس کے ذریعے ڈائریکٹنگ اور اسکرین پلے سمیت پروڈیوسنگ کا بھی ڈیبیو کرنے جا رہے ہیں۔یہ فلم 1937 میں بننے والی امریکی فلم کا آفیشل ریمیک ہے، اس سے زیادہ حیرانگی کی بات یہ ہے کہ اس کا پہلا ریمیک 1976 میں بنایا گیا تھا، اب اسی فلم کا ریمیک تیسری بار بنایا جا رہا ہے۔

فلم کی کہانی کو تبدیل نہیں کیا گیا۔جہاں فلم میں لیڈی گاگا نے ایک گلوکارہ کا کردار ادا کیا ہے، وہیں حقیقی زندگی میں گلوکاری کرنے والی اداکارہ فلم میں میوزک کنسرٹ بھی کرتی نظر آتی ہیں۔متنازع لباس، تشدد پر ابھارنے والے مناظر اور منفرد فیشن اسٹائل اپنا کر دنیا بھر کے لوگوں کو اپنا دیوانہ بنانے والی لیڈی گاگا کے کیریئر اور تنازعات پر اگرچہ ویب اسٹریمنگ ویب سائیٹ ’نیٹ فلیکس’ دستاویزی فلم بھی جاری کر چکی ہے۔تاہم اب وہ پہلی بار کسی ہولی وڈ فلم میں ایک ایسی نوجوان گلوکارہ کا کردار ادا کرتی نظر آئیں گی، جو دوسرے گلوکار کی محبت میں گرفتار ہوجاتی ہیں۔ٹورنٹو فلم فیسٹیول میں اپنی فلم کے پریمیئر کے دوران صحافیوں سے بات چیت کے دوران لیڈی گاگا نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ بالآخر ان کا خواب پورا ہوگیا اور انہوں نے اداکاری کے شعبے میں قدم رکھ دیا۔لیڈی گاگا نے بتایا کہ اداکاری کرنا ان کا بچپن کا خواب تھا، جو اب جاکر پورا ہوا۔’’اے اسٹار از بارن‘‘ آئندہ ماہ 12 اکتوبر کو سینما گھروں کی زینت بنے گی۔

یاد رہے کہ ارجن کپور کی فلم نمستے انگلینڈ اکشے کمار کی کامیاب فلم نمستے لندن کا سیکوئل ہے۔فلم نمستے لندن 2007 میں ریلیز ہوئی تھی۔اپنی دوسری فلم نمستے انگلیڈ کے حوالے سے اداکار کا کہنا تھا کہ ’اگر آپ کو نمستے لندن پسند آئی تھی تو یقیناً یہ فلم بھی پسند آئے گی، اس کی رومانوی کہانی نہایت منفرد ہے۔اس فلم میں ارجن کپور پرینیتی چوپڑا کے ساتھ کام کرتے نظر آئیں گے، یہ دونوں ایک ساتھ 2012 کی فلم ’عشق زادے‘ میں کام کرتے نظر آئے تھے۔ارجن کا ماننا ہے کہ ان 6 سالوں میں ان کے اور پرینیتی کے درمیان کچھ تبدیل نہیں ہوا۔فلم ’’نمستے انگلینڈ‘‘ 19 اکتوبر کو سینما گھروں میں نمائش کے لیے پیش کی جائے گی۔

مزید : کلچر