ضلع کونسل چارسدہ کا غیر معمولی اجلاس ، ڈپٹی کمشنر کیخلاف قرار ادا د مذمت متفقہ طورپر منظو ر

ضلع کونسل چارسدہ کا غیر معمولی اجلاس ، ڈپٹی کمشنر کیخلاف قرار ادا د مذمت ...

چارسدہ(بیورو رپورٹ)ضلع کونسل کے غیر معمولی اجلاس میں صحافیوں کے ساتھ نا مناسب اور ہتک امیز رویے ،6ستمبر کے سرکاری تقریب اور شجرکاری مہم میں ضلعی حکومت کو نظر انداز کرنے پر ڈپٹی کمشنر چارسدہ عبدالقادر شاہ کے خلاف متفقہ قرارداد مذمت منظور ۔ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے صحافیوں کے ساتھ نامناسب رویہ کی تحقیقات کیلئے ضلع کونسل میں تمام سیاسی پارٹیوں کے پارلیمانی لیڈرز پر مشتمل انکوائر ی کمیٹی قائم کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق ضلع کونسل کا اجلاس ضلع نائب ناظم مصور شاہ درانی کی صدارت میں منعقد ہوئی۔ اجلاس میں ضلع ناظم فہد ریاض خان ، اپوزیشن لیڈر اجمل خان اور شاہد اللہ خان سمیت ضلع کونسل کے مرد و خواتین ممبران نے شرکت کی ۔ڈپٹی کمشنر عبد القادر شاہ دعوت ملنے کے باوجود ضلع کونسل کے اجلاس میں شر یک نہیں ہوئے اسکی جگہ ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرمحمد عمر اجلاس میں شریک ہوئے۔ اجلاس کے آ غاز میں ضلع کونسل کے ممبران نے ڈپٹی کمشنر کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ پانچ ستمبر کو ڈی سی کے دفاتر میں چارسدہ پریس کلب کے سینئر صحافیوں کفایت اللہ، احسان اللہ شیر پاؤ، محمد جان، آفسر علی اور ملک وقاص کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ نا صرف قابل مذمت بلکہ قابل آفسوس بھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پریس کلب کے سینئر صحافی ایک خبر پر ڈپٹی کمشنر کا مؤقف لینے کیلئے انکے دفتر گئے جہاں انہیں ڈی سی کے نامناسب اور ہتک امیز رویہ کا سامنا کرنا پڑا۔ ڈپٹی کمشنر نے صحافیوں کو برا بھلا کہا انہیں دھمکیاں دیئے اور ان پر ہاتھ اٹھانے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا صحافت ریاست کا چوتھا ستون ہے اور صحافی مظلوم، محروم اور مجبور عوام کی ترجمانی کا فریضہ ادا کر رہے ہیں ہمیں انہیں عزت و احترام دینا چاہئے ۔ اس موقع پر اپوزیشن لیڈر اجمل خان نے ڈپٹی کمشنر کا صحافیوں کے ساتھ ناروا رویہ کے خلاف قرارداد مذمت پیش کی جسے پورے کونسل نے متفقہ طور پر منظور کر لی۔ اجلاس میں علاقہ سرکی ٹیٹارہ میں انیس مہینے کے بچے میں پولیووائرس کی تشخیص پر اپنے شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے سوال اٹھایا گیا کہ تسلسل کے ساتھ جاری پولیو مہم کے باوجود بچے میں پولیو وائرس کی تشخص پولیو مہم اور پولیو پروگرام کے حوالے سے خدشات جنم لے رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پولیو ویکسین دینے کے باوجود بچہ پولیو کا کیسے شکار ہوا۔ اس موقع پر ضلع کونسل کے ممبران نے ناظم اعلیٰ اور نائب ناظم اعلیٰ کی توجہ اس بات کی طرف مبذول کرائی کہ گزشتہ عام انتخابات میں پولنگ سٹیشنز پر سی سی ٹی وی کیمروں کی تعیناتی کیلئے الیکشن کمیشن نے پیسے فراہم نہیں کیئے تو اس مقصد کیلئے سکولوں میں ضروری مرمت کیلئے محکمہ تعلیم کے فنڈز کو استعمال میں لایا گیا جو کہ سکولوں میں پڑھنے والے بچوں کے حق پر ڈاکہ ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس حوالے سے وضاحت کی جائے کہ سکولوں میں پی ٹی سی فنڈ کو تعلیم کی فروغ کے بجائے الیکشن میں کیوں اور کس قانون کے تحت استعمال کی گئی ہے۔ تحصیل شب قدر سے تعلق رکھنے والے ممبران ضلع کونسل نے غیر اعلانیہ اور طویل بجلی لوڈ شیدنگ کے خلاف شیدید احتجاج کیا اور خبر دار انتظامیہ کو خبردار کیا کہ اگر شب قدر سمیت پورے ضلع میں لوڈ شیدنگ میں کمی نہیں لائی گئی تو آنے والے پولیو مہم سے بائیکاٹ کیا جائے گا۔ اس موقع پر اپوزیشن جماعتوں نے لوڈشیڈنگ کے خلاف اجلاس سے علامتی واک آؤٹ بھی کیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ضلع ناظم فہد ریاض خان نے کہا کہ صحافیوں کے ساتھ ڈی سی کو رویہ قابل مذمت ہے ، ڈپٹی کمشنر کے اس اقدام سے پورے ملک میں ضلع چارسدہ کا امیج خراب ہوا ہے، سنیئر صحافیوں کے ساتھ ہتک امیز رویہ کسی بھی بڑے سرکاری آفیسر کے شایاں شان نہیں ، ہم صحافیوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور انہیں انصاف دلا کر ہی دم لینگے ۔ ڈپٹی کمشنر کے اس ہتک امیز رویہ کا آزادانہ اور منصفانہ تحقیقات کرینگے اور اس مقصد کیلئے تمام سیاسی پارٹیوں کے پارلیمانی لیڈرز ، تحریک انصاف کے شاہد اللہ، اے این پی کے اجمل خان، قومی وطن پارٹی عارف پراچہ، جمعیت علماء اسلام (ف) کے نور الامین اور جماعت اسلامی کے حلیم اللہ پر مشتمل کمیٹی بنائی گئی ہے جو ڈپٹی کمشنر اور صحافیوں کے مابین ہونے والے واقعے کی تحقیقات کر ے گی اور رپورٹ ضلع کونسل میں پیش کریگی۔

B

مزید : پشاورصفحہ آخر