یہ انتہائی شرمناک ہے کہ کچھ لوگ بیگم کلثوم نواز کی موت سے نواز شریف اور مریم نواز کیلئے ہمدردیاں حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور ۔۔۔ حمزہ علی عباسی نے ایسی بات کہہ دی کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

12 ستمبر 2018 (10:02)

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیر اعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کے انتقال پر پورا ملک ہی سوگ کی کیفیت میں ہے لیکن ایسے میںکچھ سیاسی کشمکش بھی دیکھنے میں آرہی ہے۔ اسی کشمکش کا نتیجہ اداکار حمزہ علی عباسی کا وہ بیان بھی ہے جس میں انہوں نے اظہار افسوس کے ساتھ ساتھ ایسی بات بھی کہہ دی ہے کہ ہنگامہ برپا ہوگیا ہے۔

اداکار حمزہ علی عباسی نے ٹوئٹر پر بیگم کلثوم نواز کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا اوران کیلئے دعائے مغفرت کی ۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے درخواست کی کہ بیگم کلثوم نواز کے انتقال کو سیاسی رنگ نہ دیا جائے اور اس طرح کی رائے کا اظہار نہ کیا جائے ، چونکہ بیگم کلثوم نواز کا انتقال ہوچکا ہے اس لیے نواز شریف اور مریم نواز کو رہا کیا جانا چاہیے۔

اس ٹویٹ کے کچھ دیر بعد حمزہ علی عباسی نے ایک اور ٹویٹ کیا اور لکھا ’ یہ بہت ہی شرمناک بات ہے کہ کس طرح بعض لوگ کلثوم بی بی کی موت کو نواز شریف اور مریم نواز کیلئے ہمدردیاں حاصل کرنے کیلئے استعمال کر رہے ہیں اور دونوں کو ٹریجک ہیرو کے طور پر پیش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،یہ شرمناک، قطعی شرمناک اور انتہائی کراہت آمیز بات ہے، اللہ کلثوم بی بی کی روح پر رحم فرمائے اور ہمیں کچھ شائستگی عطا فرمائے۔

حمزہ علی عباسی کی بات پر سوشل میڈیا پر ایک نئی بحث چھر گئی ہے اور لوگوں کی جانب سے انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ پیپلز پارٹی کے رہنما نبیل گبول نے کہا ’ مجھے حمزہ کا مستقبل تاریک نظر آرہا ہے، جب حمزہ علی عباسی کی بیوی کا انتقال ہوگا اور وہ خود جیل میں ہوگا تو تب میں اسے یہ ٹویٹ یاد دلاﺅں گا‘۔

مریم نے لکھا ’ بھائی تو بولتا ہی کیوں ہے؟‘۔

احمد نامی صارف نے حمزہ علی عباسی کو مخاطب کرکے کہا ’ تم انتہائی بے شرم گندگی کے ڈھیر تھے، ہو اور رہو گے‘۔

نجی ٹی وی کی خاتون اینکر سمیعہ لیاقت نے حمزہ علی عباسی پر چار حروف بھیجے۔

سینئر خاتون صحافی عافیہ سلام نے لکھا ’اس سب میں جو واحد شرمناک چیز ہے وہ تم ہو‘۔

سینئر صحافی مدثر سعید نے لکھا ’آپ کے مطابق کوئی نواز شریف اور مریم نواز سے افسوس بھی نا کرے کیونکہ اس ہمدردی کا فائدہ نواز شریف اور مریم نواز کو پہنچ سکتا ہے، سلام ہے آپ کی والدہ محترمہ کی تربیت پر کہ جنہوں نے آپ کو بنیادی انسانی جذبات سے محروم رکھا اور اقدار تک رسائی نہیں دی، شطرنج کے پتھر کے پیادے‘۔

مزیدخبریں