انگلش فاسٹ باؤلر جیمز اینڈرسن نے سابق آسٹریلوی باؤلر گلین میک گراتھ کو پیچھے چھوڑ دیا

انگلش فاسٹ باؤلر جیمز اینڈرسن نے سابق آسٹریلوی باؤلر گلین میک گراتھ کو ...
انگلش فاسٹ باؤلر جیمز اینڈرسن نے سابق آسٹریلوی باؤلر گلین میک گراتھ کو پیچھے چھوڑ دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ کے فاسٹ باﺅلر جیمز اینڈرسن 564 وکٹوں کے ساتھ ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں انگلینڈ کے کامیاب ترین فاسٹ باؤلر بن گئے ہیں۔ انہوں نے یہ اعزاز بھارت کیخلاف کھیلے گئے آخری ٹیسٹ میچ میں حاصل کیا اور آسٹریلیا کے گلین میک گراتھ کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔

سابق آسٹریلوی فاسٹ باؤلر گلین میک گراتھ 124 ٹیسٹ میچوں میں 563 وکٹیں حاصل کر رکھی تھیں تاہم جیمز اینڈرسن نے انہیں اس اعزاز سے محروم کردیا۔ 36 سالہ فاسٹ باؤلر نے 2003ءمیں لارڈز کے تاریخی میدان میں زمبابوے کے خلاف ٹیسٹ ڈیبیو کیا اور اسی میچ میں اپنی پہلی ٹیسٹ وکٹ حاصل کی تھی۔

جیمز اینڈرسن نے محض دو سال میں 200 وکٹوں کے سنگ میل کو عبور کیا جبکہ اگلے دو سال بعد انہوں نے 300 وکٹیں حاصل کیں اور پھر ویسٹ انڈیز کے دنیش رام دین کو آؤٹ کر کے انگلینڈ کے کامیاب ترین باؤلر بنے۔

انگلش فاسٹ باؤلر نے بھارت کے خلاف آخری ٹیسٹ میچ میں بھارتی بلے باز محمد شامی کو آؤٹ کرکے یہ عالمی ریکارڈ اپنے نام کرنے کیساتھ ساتھ اپنی ٹیم کو بھی فتح سے ہمکنار کرایا۔خیال رہے کہ انگلینڈ نے بھارت کو پانچ ٹیسٹ میچز کی سیریز میں 4-1 سے شکست دی ہے، بھارت کو سیریز کے صرف ایک ٹیسٹ میچ میں کامیابی مل سکی۔

مزید : کھیل